امریکہ پلٹ پاکستانی کی دو بیٹے قتل کر کے خودکشی

امریکہ پلٹ پاکستانی کی دو بیٹے قتل کر کے خودکشی
 امریکہ پلٹ پاکستانی کی دو بیٹے قتل کر کے خودکشی

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

گجرات (ویب ڈیسک ) لاہور سے بھانجے کے گھر مہمان آئے امریکہ پلٹ شخص نے اپنے دو بیٹوں کو قتل کرنے بعد خودکشی کر لی۔ شادمان کالونی میں معروف معالج ڈاکٹر عرفان شوکت شیرازی کے گھر میں قیام پذیر ا نکے امریکہ پلٹ ماموں شکیل نے ایک کمرے میں پہلے اپنے 16سالہ بیٹے عزیر اور 12 سالہ بیٹے عمیر کو سر میں گولیاں مار کر قتل کیا اور پھر اسی پسٹل سے خود کو گولی مار کر خودکشی کر لی۔ واقعہ کی اطلاع ملتے ہی ڈی پی او گجرات رائے اعجاز احمد سمیت اعلیٰ افسران اور پولیس کی بھاری نفری جائے واقعہ پر پہنچی اور تین باپ بیٹوں کی اجتماعی موت کے حوالہ سے شواہد اکٹھے کر نے کے بعد نعشوں کو پوسٹمارٹم کیلئے عزیز بھٹی شہید ہسپتال منتقل کر دیا گیا ۔ ڈی پی او رائے اعجاز احمد نے کہاکہ شکیل اور اس کے بیٹوں کی ہلاکت کے حوالہ سے تمام پہلوﺅں پر تفتیش کریں گے، متوفی کے پاس سے ایک تحریر ملی ہے جس پر لکھا ہے کہ ہم خودکشی کر رہے ہیں تاہم واقعہ کے وقت کمرے کا دروازہ کھلا ہونے سے واردات مشکوک ہو چکی ہے اور ڈاکٹر اور ملازمین سمیت تمام فیملی کو شامل تفتیش کر لیا گیا ہے ، ابتدائی تفتیش میں گھریلو ملازمین کے اس بیان نے کہ وہ ہم فائر کی آواز سن کر باہر کی طرف دیکھتے رہے، کئی شکوک و شہبات کو جنم دیدیا ہے جس پر غور کیا جا رہا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ مقتول کو کاروباری حوالے سے بھی نقصان پہنچا تھا جس پر وہ کوفت میں مبتلا تھا اور ذہنی سکون حاصل کرنے کی گولیاں بھی استعمال کر رہا تھا۔

مزید : گجرات