لاہور پولیس کا پتنگ بازنوجوان پر تشدد،گلے میں رسی باندھ کر سڑک پر گھسیٹتے رہے

لاہور پولیس کا پتنگ بازنوجوان پر تشدد،گلے میں رسی باندھ کر سڑک پر گھسیٹتے ...
لاہور پولیس کا پتنگ بازنوجوان پر تشدد،گلے میں رسی باندھ کر سڑک پر گھسیٹتے رہے

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لاہور (ویب ڈیسک) کوٹ لکھپت پولیس کے ایس ایچ اونے درندگی کا مظا ہرہ کرتے ہوئے چھت پر کھڑے ہوکر پتنگ بازی دیکھنے کے الزام میں نوجوان کے گلے میں رسی ڈال کر سڑک پر گھسیٹنے کے بعد شدید تشدد کا نشانہ بنا ڈالا ، احتجاج کرنے پر پولیس نے ہوائی فائرنگ کرکے مظاہرین کو منتشر کردیا۔ اخباری رپورٹ کے مطابق کوٹ لکھپت پولیس نے اپنی جھوٹی افسری دکھانے کےلئے چھت پر کھڑے پتنگ بازی ردیکھنے والے نوجوان کو حراست میں لے لیا اور اہل علاقے کے سامنے اپنی دہشت گردی دکھانے کےلئے انسانیت سوز تشدد کا نشانہ بنایا، نوجوان کے گلے میں رسی ڈال کر سڑک پر گھسیٹتے رہے اس دوران نوجوان کی جانب سے رحم کی اپیل کرنے کے باوجود نوجوان کو تشدد کا نشانہ بنایا جاتا رہا۔ کوٹ لکھپت پولیس کی غنڈا گردی پر اہل علاقہ نے شدید احتجاج کرتے ہوئے ٹائر نذر آتش کرتے ہوئے سڑک بلاک کر دی، پولیس نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لئے ہوائی فائرنگ کی اور مظاہرین کو منتشر کردیا، مظاہرین کا کہنا تھا کہ وزیراعلیٰ کا تھانہ کلچر ختم کرنے کا خواب ادھورا رہ گیا ہے۔انہوں نے اعلیٰ حکام سے اپیل کی ہے کہ وہ واقعہ میں ملوث ایس ایچ او کوٹ لکھپت اور دیگر اہلکاروں کے خلاف کارروائی عمل میں لائیں۔

مزید : لاہور