ماڈل ٹاﺅن میں قتل عام کے ذمہ دار شہباز شریف ہیں، اب بات شریف برادران کی پھانسی پر ختم ہو گی: طاہرالقادری

ماڈل ٹاﺅن میں قتل عام کے ذمہ دار شہباز شریف ہیں، اب بات شریف برادران کی ...
ماڈل ٹاﺅن میں قتل عام کے ذمہ دار شہباز شریف ہیں، اب بات شریف برادران کی پھانسی پر ختم ہو گی: طاہرالقادری

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری نے کہا ہے کہ جوڈیشل کمیشن نے سانحہ ماڈل ٹاﺅن کا ذمہ دار شہباز شریف کو قرار دیا ہے، اب شریف برادران کو پھانسی لگے گی۔ انقلاب مارچ کے شرکاءسے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر طاہر القادری کا کہنا تھا کہ سانحہ ماڈل ٹاﺅن کے بعد شہباز شریف اور حکومت کو بے گناہ ثابت کرنے کیلئے ٹریبونل بنایا گیا لیکن ہماری ایف آئی آر درج نہیں ہوئی تھی اس لئے ٹریبونل میں فریق نہیں بنے تاہم جوڈیشل کمیشن ٹربیونل کی رپورٹ کو دبا دیا گیا تھا لیکن اب یہ رپورٹ ٹی وی چینل کے ذریعے منظرعام پر آ گئی ہے جس میں شہباز شریف اور پنجاب حکومت کو سانحہ ماڈل ٹاﺅن کا ذمہ دار قرار دے دیا ہے اور یہ ثابت ہو گیا ہے کہ ثابت ہو گیا حکمران اب بچ نہیں سکتے۔ ان کا کہنا تھا کہ سانحہ ماڈل ٹاﺅن کی ذمہ دار پنجاب حکومت ہے، کہاں ہے قانون، آئین اور جمہوریت؟ مظلوم عوام کی فریاد سننے والا کوئی نہیں؟ ہے کوئی جو شہداءکے لواحقین اور یتیموں کی سنے؟۔ ان کا کہنا تھا کہ سانحہ ماڈل ٹاﺅن جیسا بڑا فیصلہ نواز شریف اور شہباز شریف کی اجازت کے بغیر نہیں ہو سکتا تھا، رپورٹ آ گئی ہے، نواز شریف اب آپ نہیں بچ سکتے، اب ایف آئی آر بھی درج ہو گی، گرفتاریاں بھی ہوں گی اور حکمرانوں سے عام آدمی کی طرح نمٹا جائے گا، بات اب حکومتوں کی برطرفی تک نہیں رہی بلکہ اب بات شریف برادران کی پھانسی پر ختم ہو گی۔ انہوں نے کہا کہ ہماری ڈیڈ لائن میں 23 گھنٹے باقی رہ گئے ہیں، سانحہ ماڈل ٹاﺅن کی ایف آئی آر 21 نامزد افراد کے خلاف درج کی جائے۔ طاہر القادری نے کارکنوں کو ہدایت کی کہ وہ ڈیڈ لائن ختم ہونے سے پہلے کفن منگوا لیں، مجھے رونے والوں کے آنسو نہیں، ان کے خون کے قطرے چاہئیں، خدا کیلئے گھروں سے نکل آﺅ۔

مزید : قومی /Headlines