مشرق وسطیٰ کی صورتحال ،امریکہ نے بھر پور آپریشن کی تیاری پکڑ لی

مشرق وسطیٰ کی صورتحال ،امریکہ نے بھر پور آپریشن کی تیاری پکڑ لی
مشرق وسطیٰ کی صورتحال ،امریکہ نے بھر پور آپریشن کی تیاری پکڑ لی

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

واشنگٹن (نیوز ڈیسک) امریکہ نے عراق کے بعد شام میں بھی فضائی حملوں کی تیاری شروع کردی ہے اور اس مقصد کیلئے جاسوسی پروازوں کا آغاز کردیا گیا ہے۔ امریکی حکام کا کہنا ہے کہ شام کی فضاﺅں میں امریکہ کے جاسوسی طیاروں نے پرواز شروع کردی ہے تاکہ حملوں سے پہلے اہم معلومات حاصل کی جاسکیں۔

ماضی میں صدر اوباما کا یہ موقف رہا ہے کہ وہ امریکی فوجوں کو مزید کسی جنگ میں نہیں جھونکیں گے لیکن عراق میں عسکریت پسند گروپ دولت اسلامی عراق و شام (آئی ایس آئی ایس) کی طرف سے امریکی سفارتکاروں اور اقلیتی یزیدی برادری کو لاحق ہونے والے خطرات کے بعد رواں ماہ کے آغاز میں عراق میں آئی ایس آئی ایس کے ٹھکانوں پر فضائی حملوں کا آغاز کردیا گیا۔ دفاعی تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ اگرچہ امریکہ میں یہ رائے پائی جارہی تھی کہ آئی ایس آئی ایس کے خطرے سے نمٹنے کیلئے شام میں اس کے ٹھکانوں کو نشانہ بنانا ضروری ہے لیکن حملوں کے فیصلہ کی طرف فوری پیش قدمی کا باعث شام میں امریکی صحافی جیمز فولی کا قتل ہے جسے آئی ایس آئی ایس نے اغواءکے بعد ہلاک کیا۔

اس وقت کئی دیگر امریکی شہری بھی اس گروپ کے قبضہ میں ہیں۔ ابتدائی طور پر آئی ایس آئی ایس کے زیر قبضہ اور ان کی خلافت کے مرکز رقہ شہر پر حملوں کے امکانات ہیں۔دوسری جانب شامی صدر بشارالاسد نے امریکن فضائی حملوں کی تجویز پر سخت تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ اسے شام کی خود مختاری پر حملہ تصور کیا جائے گا۔

مزید : بین الاقوامی