قیدی نے جیل میں بیوی کو مار ڈالا

قیدی نے جیل میں بیوی کو مار ڈالا
قیدی نے جیل میں بیوی کو مار ڈالا

  

بلغراد (نیوز ڈیسک) سربیا کی ایک جیل میں ایک عادی مجرم نے ملاقات کیلئے آنے والی اپنی بیوی کو گلا دبا کر قتل کردیا۔ پینتیس سالہ ایوان ملووانووک منشیات فروشی کے دھندے میں تین سال 10 ماہ کی قید کاٹ رہا ہے اور یہ چوتھی مرتبہ ہے کہ وہ اسی جرم میں جیل آیا ہے۔

اس کی 29 سالہ بیوی بوجانا جیل میں قائم کئے گئے خصوصی کمرے ”گوشہ محبت“ میں اس سے خاص ملاقات کیلئے آئی تھی۔ جیل مین اس طرح کے دو کمرے بنائے گئے ہیں جن میں نہ ہی کوئی گارڈ ہوتا ہے اور نہ ہی کوئی کیمرہ تاکہ قیدی اور شریک حیات مکمل خلوت میں وقت گزار سکیں۔ اس خصوصی ملاقات کیلئے قیدیوں کو دو ماہ میں دو گھنٹے کا وقت دیا جاتا ہے۔

ایوان اور اس کی بیوی کو گارڈ تنہا چھوڑ کر باہر چلے گئے تھے اور جب وہ دو گھنٹے بعد واپس آئے تو اس کی بیوی بستر پر مردہ پڑی تھی۔ مجرم کا کہنا ہے کہ اس کی بیوی نے کہا تھا کہ یہ آخری ملاقات ہ ے اور وہ اسے چھوڑنا چاہ رہی تھی جس پر مشتعل ہوکر اس نے اسے قتل کردیا۔

مقتولہ کی بہن کا کہنا ہے کہ دونوں پہلے ہی علیحدہ ہوچکے تھے لیکن بوجانا نے اس کی دلجوئی اور تنہائی دور کرنے کیلئے اس کے پاس جانا جاری رکھا ہوا تھا۔

مزید : جرم و انصاف