چوکس و توانا رہنے کےلئے مفید مشورے

چوکس و توانا رہنے کےلئے مفید مشورے
چوکس و توانا رہنے کےلئے مفید مشورے

  

برمنگھم ( نیوز ڈیسک) بظاہر تندرست نظر آنے والا شخص اگر سستی، کاہلی اور بے زاری کا شکار ہے، تو اس کا صاف مطلب ہے کہ وہ توانائی کی کمی کا شکار ہے۔ تھوڑا سا کام کرنے کے بعد اگر انگڑیاں آنے لگیں اور بہت زیادہ تھکاوٹ محسوس ہونے لگے تو فوری طور پر اپنی جسمانی توانائی پر خصوصی توجہ دیں۔ اسی سلسلے میں ہم آپ کو یہاں ایسے طریقوں سے روشناس کروائیں گے، جن پر عمل پیرا ہونے سے آپ جسمانی توانائی میں اضافہ کر سکتے ہیں۔

بھرپور نیند: ایک تحقیق نے یہ ثابت کیا ہے کہ نیند کی کمی نہ صرف آپ کی صحت کو عمومی نقصان پہنچاتی ہے بلکہ یہ وزن پر بھی اثر انداز ہوتی ہے۔ لہذا روزانہ رات کو سات سے نو گھنٹے بھرپور نیند لیں تاکہ پھر سارا دن آپ خود کو چاک و چوبند رکھ سکیں۔

رات گئے کھانا: رات گئے بھاری بھرکھانا نہ صرف وزن بڑھانے کا موجب ہے، بلکہ یہ صبح سویرے بیڈ سے اٹھنا بھی دشوار بنا دیتا ہے، لہذا رات کو سونے سے کچھ دیر پہلے کھانا کھائیں اور اس کے بعد بھی اگر بھوک ستائے تو بھاری بھرکم خوراک کی بجائے تھوڑا بہت پھل وغیرہ استعمال کریں۔

ناشتہ: متعدد تحقیقات نے یہ ثابت کیا ہے کہ صبح سویرے بھرپور ناشتہ کرنے والے افراد سارا دن جسمانی اور ذہنی طور پر چاک و چوبند رہنے کے ساتھ بہت اچھا محسوس کرتے ہیں۔ لہذا دفتر جانے کی جلدی ہو یا سکول، ناشتے کو کبھی قربان مت کریں۔

کیفین: کافی میں پایا جانے والا جزو کیفین دنیا بھر میں جسمانی تحریک کا اہم ترین ذریعہ ثابت ہوا ہے۔ آج سائنسی تحقیق نے یہ ثابت کردیا ہے کہ قہوہ یا کافی کا استعمال آپ کو چاک و چوبند اور کام پر بھرپور دھیان دینے کی وجہ بن سکتا ہے۔

جسمانی آبیدگی: جسمانی صحت اور ذہنی آسودگی کے لئے پانی نہایت ضروری جزو ہے، کیوں کہ انسانی جسم 60 فیصد تک پانی پر مشتمل ہے۔ لہذا جسمانی کارکردگی کو بہتر بنانے کے لئے آبیدگی یعنی ہائیڈریشن نہایت ضروری ہے۔

ان کے علاوہ تھوڑے وقفے سے کاربوہائیڈریٹ اور پروٹین سے بھرپور غذا کا استعمال بھی جسمانی توانائی کو برقرار رکھنے میں نہایت اہم کردار کرتا ہے۔

مزید : تعلیم و صحت