پنجاب میں بھٹہ خشت کے بچوں کی سکول داخلہ مہم محفوظ مستقبل کا آغاز ہے ،راجہ اشفاق

پنجاب میں بھٹہ خشت کے بچوں کی سکول داخلہ مہم محفوظ مستقبل کا آغاز ہے ،راجہ ...

لاہور( خبرنگار) وزیر اعلی پنجاب محمد شہبازشریف کے بھٹوں سے چائلڈ لیبر کے خاتمے اوربھٹہ مزدوروں کے بچوں کی سکولوں میں انرولمنٹ کے خواب کی تکمیل کا آغاز کر دیا گیا ہے۔وزیراعلی کی خصوصی ہدایت پر بھٹہ مزدوروں کے بچوں کی سکولوں میں داخلہ مہم کا آغاز 35بچوں کی انرولمنٹ کرکے ضلع ننکانہ صاحب سے کر دیا گیا ہے۔ان خیالات کا اظہار صوبائی وزیر محنت و انسانی وسائل راجہ اشفاق سرور نے گزشتہ روز ضلع ننکانہ میں بھٹہ مزدوروں کے بچو کی سکولوں میں داخلہ مہم کی افتتاحی تقریب کے خطاب کے موقع پر کیا۔انہوں نے کہا کہ ہمیں سیاست سے بالاتر ہوکر اپنے ملک،اپنے بچوں اوراپنے مستقبل کی خاطر اپناکردار ادا کرنا ہوگا۔ ہمارہ ٹارگٹ 6ماہ میں بھٹہ مزدوروں پر کام کرنے والے تمام بچوں کو سکولز میں داخل کروانا ہے۔آئی ایل اوکے پاکستان میں کنٹری ڈائریکٹر فرانسسکو ڈی او ویڈیو،پارلیمانی سیکرٹری اطلاعات رانا ارشد،اراکین صوبائی اسمبلی رانا جمیل حسن خان، سائرہ افتخار،سردار رمیش سنگھ اروڑا،ایم ڈی پنجاب ایجوکیشن فاؤنڈیشن ڈاکٹر انیلہ سلمان،،چیئرمین پنجاب فوڈ اتھارٹی طارق باجوہ اور محکمہ لیبر ،سکول ایجوکیشن،لوکل گورنمنٹ کے ایڈیشنل سیکرٹریز،بھٹہ مزدوروں ،مزدور تنظیموں اور بھٹہ مالکان کے علاوہ داخل کئے جانے والے بچوں نے تقریب میں شرکت کی۔صوبائی وزیر محنت و انسانی وسائل راجہ اشفاق سرور نے کہا کہ بھٹہ مزدوروں کے تمام بچوں کو جن کی عمر(4سے14سال) ہے ان کو 6ماہ کے دورانیہ میں سکولوں میں داخل کروایا جائے گا۔اس مقصد کے لیے تمام متعلقہ ضلعی افسران کو تکنیکی مہارت کے لیے باقاعدہ ٹریننگ دے دی گئی ہے۔ پورے پنجاب کے 6090بھٹوں پر موجود لیبر کے تمام بچوں کو 6ماہ کے دوران سکولوں میں داخل کروانے کے لیے فوری اقدامات کیے جارہے ہیں۔ جبری مشقت اور بچوں کی مزدوری کے حوالے سے ٹھوس اقدامات کرنے کی ضرورت ہے ۔وسائل کی کمی کے ساتھ بھی مزدوروں کے بچوں کو سکول ضرور جانا چاہیے تاکہ مستقبل کو محفوظ کیا جاسکے۔پراجیکٹ ڈائریکٹر اینٹی گریٹڈ پراجیکٹ ڈاکٹر جاوید گل نے اپنے خطاب کے دوران تقریب میں شامل مہمانوں کو تعلیم کی اہمیت اور بھٹہ مزدوروں کے بچوں کے سکولوں میں داخلے بارے تفصیلات سے بھی آگاہ کیا۔

مزید : علاقائی