لاہور میں موسلا دھار بارش، 2بچیاں جاں بحق، 4افراد زخمی، پنجاب اسمبلی کی چھت ٹپک پڑی

لاہور میں موسلا دھار بارش، 2بچیاں جاں بحق، 4افراد زخمی، پنجاب اسمبلی کی چھت ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


لاہور(وقائع نگار،نمائندہ خصوصی)صوبائی دارالحکومت کے مختلف علاقوں میں موسلا دھار بارش کے باعث نشیبی علاقے زیر آب آگئے،،چھتیں گرنے اور کرنٹ لگنے کے واقعات میں دو بچیاں جاں بحق اور 4افراد زخمی ہوگئے۔تفصیلات کے مطابق لاہور میں صبح سویرے ہونے والی،موسلا دھار بارش سے تقریباً پورا شہر ڈوب گیا۔ایئرپورٹ ایریا،جوڑے پل،صدر،کینٹ،دھرمپورہ،گڑھی شاہو،ریلوے سٹیشن،لکشمی چوک،گوالمنڈی،ہال روڈ،مال روڈ،ریگل روڈ،شادمان،اچھرہ،سمن آباد،کلمہ چوک،لبرٹی،فیروز پور روڈ،ڈیفنس،ٹھوکر نیاز بیگ سمیت تقریباً پورے شہر کی تمام سڑکیں زیرآب آگئیں،انڈر پاس بھر گئے۔گاڑیاں،موٹرسائیکل و دیگر سواریاں نصف سے زیادہ پانی میں ڈوبی رہیں۔بارش کے باعث دفاتر میں حاضری متاثر ہوئی جبکہ ہائیکورٹ میں کیسز کی سماعت پر بھی اثر پڑا۔صورتحال کے پیش نظر واسا نے شہر میں ایمر جنسی تو نافذ کردی لیکن انہیں سیلاب کا سا منظر پیش کرتی سڑکوں سے نکاسی آب میں شدید مشکلات کا سامناہے۔مسلسل بارش کے باعث پنجاب اسمبلی کی چھت بھی ٹپک پڑی،بارش سے پنجاب اسمبلی میں سپیکر آفس کی چھت بھی ٹپکنے لگی۔سپیکر روم میں بارش کے پانی سے قیمتی قالین بھی گیلا ہو گیا۔بعد ازراں کمرے میں جگہ جگہ بالٹیاں رکھی گئیں تاکہ پانی مزید کمرے میں نہ پھیل سکے۔کمری میں بارش کا پانی دیکھ کر سپیکر رانا اقبال نے ڈیپاٹمنٹ کی سخت سرزنش کی سپیکر غصے سے کمرے سے باہر نکل گئے ۔اجلاس ختم ہونے کے بعدبھی سپیکر کمرے میں داخل نہ ہوئے وہ سی ایم روم میں چلے گئے۔بارش کے باعث درجنوں فیڈرز بھی ٹرپ کرگئے۔مناواں میں مکان کی چھت گرگئی جس سے ملبے تلے دب کرایک 2 سالہ بچی نور فاطمہ جاں بحق جبکہ تین افراد زخمی ہوگئے۔ذرائع کے مطابق مناواں کے علاقہ اڈہ جھبیل جھگیاں مزنگ گاؤں میں محنت کش بائز آصف کے گھر کی چھت گر گئی جس کی زد میں آ کر میاں بیوی اور ان کے دو بچے ملبے تلے دب گئے ۔وقوعہ کی اطلاع ملنے پر اہل علاقہ نے اپنی مدد آپ کے تحت ملبے تلے دبے ہوئے افراد کو نکالنے کی کوشش کی جبکہ ریسکیو ٹیمیں بھی مو قع پر پہنچ گئیں جنہوں نے ایک گھنٹے کی محنت سے چاروں ملبے تلے دبے افراد کو نکالا اور ہسپتال منتقل کیا جہاں پر راستے میں ہی 2سالہ بچی نور فاطمہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے زندگی کی بازی ہار گئی جبکہ باقی افراد کو طبی امداد دی جا رہی ہے ۔دوسرے واقعہ میں سبزہ زار کے علاقے میں کرنٹ لگنے سے 9سالہ بچی منان جاں بحق ہوگئی جس پر اہل علاقہ نے لیسکو کے خلاف احتجاج کیا ان کا کہنا تھا کہ مینا گھر سے چیز لینے کے لیے دکان پر گئی جہاں سے واپسی پر اس کا ہاتھ بجلی کے کھمبے سے جا ٹکرایا جس میں بارش کی وجہ سے کرنٹ آیا ہوا تھا اس دوران بچی کی چیخیں سن کر اہل محلہ اس کی مدد کو دوڑے مگر 9سالہ منان کرنٹ لگنے سے جاں بحق ہو چکی تھی ۔پولیس نے دونوں بچیوں کی لاشوں کو ضروری کارروائی کے بعد ورثا کے حوالے کر دیا ۔اسی طرح سے کاہنہ میں بارش کی وجہ سے بوسیدہ مکان کی دیوار گر گئی جس کی زد میں آ کر 32سالہ عمران ملبے تلے دب گیا ۔ریسکیو ٹیم نے زخمی کو فوری موقع پر پہنچ کر ملبے تلے سے نکالا اور قریبی ہسپتال میں منتقل کیا جہاں اس کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے۔

مزید :

صفحہ آخر -