پولیو مرض کے خاتمے میں ہر فرد کو اپنا قومی کردار کرنا ہو گا،امتیاز شاہد قریشی

پولیو مرض کے خاتمے میں ہر فرد کو اپنا قومی کردار کرنا ہو گا،امتیاز شاہد قریشی

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

پشاور(پاکستان نیوز)خیبر پختونخوا کے وزیر قانون و پارلیمانی امور امتیاز شاہد قریشی ایڈوکیٹ نے کہا ہے کہ پولیو ایک موذی مرض ہے اور اس مرض کی مکمل بیخ کنی کے لئے معاشرے کے ہر فرد کو اپنا کردار ادا کرنا ہوگا۔ انہوں نے والدین سے اپیل کی کہ وہ پولیو فری پاکستان میں حکومت کے ساتھ ہر ممکن تعاون کریں ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ڈسٹرکٹ کونسل کوہاٹ میں پولیو ایوارڈ کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ تقریب میں ڈی آئی جی کوہاٹ اول خان ،ایڈیشنل کمشنر کوہاٹ نعیم انور سدوزئی ،ضلع ناظم مولانا نیا ز محمد ،ڈپٹی کمشنر کوہاٹ ظاہر شاہ ،تحصیل ناظم ملک تیمور ،ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر محمد جنید ،اسسٹنٹ کمشنر لاچی عرفان اﷲ، ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنرز اقرار علی شاہ اور خالقداد وزیر نے بھی شرکت کی۔وزیر قانون نے کہا کہ کوہاٹ میں گزشتہ ڈیڑھ سال سے کوئی پولیو کیس رجسٹرڈ نہیں ہوا جس کا تمام تر سہرا ضلعی انتظامیہ اور محکمہ صحت کے اہلکاروں کو جاتا ہے جنہوں نے تمام مہمات منظم اور مربوط انداز میں چلائیں۔ انہوں نے کہا کہ اگر محکمہ صحت کے اہلکار اسی جذبے کے ساتھ کام کرتے رہے تو کوہاٹ بہت جلد پولیو فری بن جائے گا۔ ان کا کہناتھا کہ خیبر پختونخوا دہشت گردی کے فرنٹ لائن پر ہونے کے باوجود صوبائی حکومت نے اس مہم پر خصوصی توجہ مرکوز کرکے صحت اور تعلیم کو اپنی اولین ترجیحات میں رکھا ہے ۔اس موقع پر ڈپٹی کمشنر کوہاٹ ظاہر شاہ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان کی تاریخ میں اس دفعہ پولیو وائرس کے کم کیس رجسٹرڈ ہوئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ نومبر 2014 کے بعد کوہاٹ میں کوئی کیس رپورٹ نہیں ہوا اور نامساعد حالات میں اس مہم کو کامیاب بنانے میں تمام سٹیک ہولڈرز اور پولیو ورکروں نے جو اپنا کردار ادا کیا ہے وہ اپنی طرف سے ان کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں ۔انہوں نے والدین سے اپیل کی کہ وہ اپنے بچوں کو اینٹی پولیو قطرے ضرور پلوا کر انہیں عمر بھر کیلئے اپاہج ہونے سے بچائیں ۔بعد ازاں صوبائی وزیر قانونی نے مختلف شعبوں سے وابستہ افراداور پولیو ورکروں میں نقد انعامات تقسیم کئے ۔