مٹہ ،پی پی پی کے اجلاس میں ہلڑ بازی ،بدنظمی شرکاء مایوس

مٹہ ،پی پی پی کے اجلاس میں ہلڑ بازی ،بدنظمی شرکاء مایوس

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

مٹہ (نمائندہ پاکستان )پاکستا ن پیپلز پارٹی اپر سوات کے تنظیم بنانے کیلئے منعقدہ اجلاس تاریخ کی بدترین ہنگامہ ارائی کی شکار ۔صوبائی ارگنائزنگ کمیٹی بھی حالات قابونہ کرسکیں ۔کوئی فیصلہ کئے بغیر صوبائی ارگنائزنگ کمیٹی کے قائدین واپس چلے گئے ۔پی پی پی اپر سوات ایک ساتھ کام کرنے والے مقامی قائدین ایک دوسرے کی اسطرح مخالفت کرینگے ۔یہ کسی کو کوئی وہم گمان بھی نہیں تھا ۔چائے کا پروگرام دھرے کی دھرے رہ گیا ۔کارکنان اور قائدین چائے چھوڑکر چلے گئے ۔صوبائی ارگنائزنگ کمیٹی نے اخر میں صدارت کیلئے تین نام لیکر اب فیصلہ مرکزی قیادت کرینگے ۔لیکن اپر سوات پی پی پی میں شدید اختلافات اب کسی سے ڈھکے چپھے نہیں ۔لوئر سوات کی بعد اپر سوات میں شدید اختلافات پی پی پی کیلئے ایک نیا بحران اور سنگین صورتحال اختیار کرگئی ہے ۔کیونکہ جب کوئی مقامی قائد خالی پارٹی کی عہدے کیلئے ایک دوسرے کی گریبان پھاڑ سکتے ہے ۔وہ ائندہ ایک دوسرے کیساتھ پارٹی چلانے کیلئے کیا تعاون کرینگے ۔تفصیلات کے مطابق گذشتہ روز پی پی پی اپر سوات کے تنظیم بنانے کیلئے ایک اہم اجلاس مٹہ میں منعقد ہوا ۔جس میں پہلی بار کارکنان اور مقامی قائدین نے بڑی تعداد میں شرکت کی ۔اجلاس صوبائی ارگنائزنگ کمیٹی کے ذمہ داروں انجیئنر ہمایون خان ۔نور عالم خان اور مقامی قائدین انورزمان خان ،فریدون خان اور دیگر نے خطاب کی ۔اور پارٹی قربانیوں پر بات کی ۔جبکہ اس موقع پر ارگنائزنگ کمیٹی کے سنیٹر روبینہ خالد ۔نسیم اختر اور دیگر ذمہ دار بھی موجود تھے ۔اجلاس اس وقت مچھلی بازار میں تبدیل ہوگیا ۔جب ان قائدین نے اپر سوات کے صدارت کیلئے نام کی تجویز کارکنا ن اور مقامی قائدین سے مانگ لی گئی ۔جس پر پوری حال میں ایک ہنگامہ کھڑاہوگیا ۔اور ہر امیدوار کے حامیوں نے اپنے اپنے امیدوار کیلئے نعرے لگانا شروع کردی ۔جو بعد میں بے قابوں ہوکر ان ارگنائزنگ کمیٹی کے ممبران نے ہال کو چھوڑکر ایک سائیڈ روم میں بات چیت شروع کی ۔لیکن وہاں پر بھی حالات قابو نہ ہوکر اخر میں صدارت کیلئے تین امیدواروں سابق صدر سعید اللہ خان ۔سابق جنر ل سیکرٹری انورزمان خان اور شاہی خان کے نام لیکر چلے گئے ۔اور اب فیصلہ مرکزی قیادت کرینگے ۔لیکن اپر سوات میں پی پی پی کے اندر اسطرح شدید اختلافات دیکھنے پر پارٹی ورکر اور مقامی قائدین میں انتہائی مایوسی کی لہر دوڑگئی ہے ۔کیونکہ اپر سوات کی تنظیم میں ایک دوسرے کیساتھ کافی وقت مل بیٹھ کر کام کرنے والوں ایکدم اتنے شدید اختلافات اگر ایک طرف کارکنان کیلئے مایوس کن بات ہے ۔تو دوسرے طرف یہ اپر سوات پی پی پی کیلئے بھی ایک خطرناک نوید ہے ۔