’اسرائیل کو تباہ کرنے کیلئے ہم نے فوج تیار کرکے خفیہ طور پر اسے اس کی سرحدوں پر بٹھادی ہے‘ اعلان جنگ ہوگیا، امریکہ اور اسرائیل دونوں ہی بوکھلا کر رہ گئے

’اسرائیل کو تباہ کرنے کیلئے ہم نے فوج تیار کرکے خفیہ طور پر اسے اس کی سرحدوں ...
’اسرائیل کو تباہ کرنے کیلئے ہم نے فوج تیار کرکے خفیہ طور پر اسے اس کی سرحدوں پر بٹھادی ہے‘ اعلان جنگ ہوگیا، امریکہ اور اسرائیل دونوں ہی بوکھلا کر رہ گئے

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

تہران(مانیٹرنگ ڈیسک) ایرانی فوج ”پاسداران انقلاب“ کے ایک سابق سینئر کمانڈر نے ایک ایسی خفیہ فوج کے متعلق انکشاف کیا ہے جو پہلے ہی اسرائیل کی سرحدوں پر پہنچ چکی ہے اور آئندہ دو سے تین دہائیوں میں اسے صفحہ ہستی سے مٹا دے گی۔ یروشلم پوسٹ کی رپورٹ کے مطابق یہ نیا ملٹری یونٹ ریٹائرڈ جنرل محمد علی الفلکی نے قائم کیا ہے۔

مزیدپڑھیں:امریکہ اور ایران میں پھر کشیدگی،ایک دوسرے پر سمندری حدود کی خلاف ورزی کے الزامات,امریکی جہاز کی ایرانی طیارے پر فائرنگ

الفلکی کا کہنا تھا کہ ”یہ یونٹ عراق، شام اور یمن جیسے عرب ممالک میں لڑے گا، لیکن اس کے قیام کا اصل مقصد 23سال کے اندر اسرائیل کا خاتمہ کرنا ہے۔یہ یونٹ شام میں اسرائیلی بارڈر کے قریب لڑائی میں مصروف ہے۔یہاں سے یہ اسرائیل کا خاتمہ کرنے کی پوزیشن میں بھی ہو گا۔“ محمد علی الفلکی کا مزید کہنا تھا کہ شیعہ لبریشن آرمی میں صرف ایرانی شہری ہی بھرتی نہیں کیے گئے بلکہ شام و عراق جیسے جنگ کا شکار ملکوں کے نوجوان بھی اس میں شامل ہو رہے ہیں۔ رپورٹ کے مطابق الفلکی کا یہ بیان ایرانی سپریم لیڈر کے 2015ءمیں دیئے گئے بیان ہی کی توسیع ہے۔ انہوں نے کہا تھا کہ ”اللہ نے چاہا تو آئندہ 25سال بعد اسرائیل دنیا کے نقشے پر موجود نہیں ہو گا۔“