10 کروڑ کی مبینہ بے ضابطگیاں  محکمہ صحت‘ ڈسٹرکٹ اکاؤنٹس آفیسر  سے متعلقہ ریکارڈ طلب‘مافیا میں ہلچل

 10 کروڑ کی مبینہ بے ضابطگیاں  محکمہ صحت‘ ڈسٹرکٹ اکاؤنٹس آفیسر  سے متعلقہ ...

  

 ملتان (وقا ئع نگار) محکمہ صحت ملتان اور اکاؤنٹس آفس میں  سال 19-2018 میں 10 کروڑ روپے سے زائد رقم کی مبینہ  بے ضابطگیوں کا انکشاف سامنے آنے کے بعد اینٹی کریپشن اسٹبلشمنٹ ملتان ریجن کا دفتر بھی حرکت میں آگیا ہے سرکل آفیسر اینٹی کریپشن نے محکمہ صحت ملتان اور ڈسٹرکٹ اکاوئنٹس آفیسر (بقیہ نمبر40صفحہ6پر)

سے متعلقہ ریکارڈ طلب کر لیا ہے دوسری جانب محکمہ آڈٹ نے  صوبائی سیکرٹری صحت اور اکاونٹنٹ جنرل پنجاب کو مشترکہ طور پر انکوائری کی سفارش کر دی۔ غیر قانونی طور پر ترقیوں اور تنخواہوں اور واجبات کی ادائیگی میں قواعد اور ہدایات کو نظر اندازکیا گیا۔ صحت اور اکاؤنٹس آفس ملتان میں مبینہ بے ضابطگیاں اور کمزور مالیاتی کنٹرول نظر آیا ہے محکمہ صحت کے سالانہ اڈٹ میں ساڑھے پانچ کروڑ اور چار کروڑ ستر لاکھ سے زائد رقم کی دو ادائیگیوں پر اعتراض کیے گئیساڑھے پانچ کروڑ روپے سے زائد کی ادائیگیاں بغیر بجٹ سرٹیفکیٹ اور تصدیق کے کی گئی سنییارثی لسٹ کو مرتب کئے بغیر اسامیوں کو اپ گریڈ کر کے چار کروڑ 70 لاکھ سے زیادہ کی ادائیگی کی گئی بتایا جاتا ہے اس وقت کے سی ای او ہیلتھ نے سرکاری ہدایت اور فارمولہ کو نظر انداز کر کے ضرورت سے زائد اسامیاں اپ گریڈ کیں،14 ویں اسکیل کے سینئر ٹیکنیشن کی 12 اسامیاں کی بجائے 24 اسامیاں اپ گریڈ کر دی گئیں سی ای او ہیلتھ نے اختیار نہ ہونے کے باوجود گریڈ 16 میں ترقیاں دے دیں سی ای او نے تمام الائید ہیلتھ پروفیشنلز کو محکمانہ پروموشن کمیٹی کی منظوری اور سینیارٹی لسٹ مرتب کئے بغیر ترقی دی اکاؤنٹس آفس نے غیر قانونی طور پر ملازمین کی تنخواہ کی فکسیشن کی اور پھر ادائیگی کر دی۔

طلب

مزید :

ملتان صفحہ آخر -