جنگ کے متحمل نہیں ہوسکتے ،پاکستان کے ساتھ مذاکرات کے سواکوئی چارہ نہیں: بھارتی وزیرخراجہ

جنگ کے متحمل نہیں ہوسکتے ،پاکستان کے ساتھ مذاکرات کے سواکوئی چارہ نہیں: ...
جنگ کے متحمل نہیں ہوسکتے ،پاکستان کے ساتھ مذاکرات کے سواکوئی چارہ نہیں: بھارتی وزیرخراجہ

  



سری نگر (مانیٹرنگ ڈیسک) بھارتی وزیر خارجہ سلمان خورشید نے کہا ہے کہ کسی جنگ کے متحمل نہیں ہوسکتے ,پاکستان کے ساتھ مذاکرات کے سوا کوئی چارہ نہیں , امن دشمن عناصر پاکستان اور بھارت کو قریب ہوتا نہیں دیکھ سکتے, چاہے امن ہو یا جنگ دونوں پڑوسی ممالک کو ہر حال ایک دوسرے کے ساتھ ہی رہنا ہے ۔ بھارتی ٹی وی کو دیئے گئے ایک انٹرویو میں انہوں نے کہاکہ پاکستان اور بھارت کے درمیان پرامن حالات کو یقینی بنانے کےلئے تعلقات کو بہتر بنانا ہوگا اور اس سلسلے میں مذاکرات کو ہر سطح پر جاری رکھنا ہوگا ۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان کے ساتھ مذاکرات کے ساتھ کوئی چارہ نہیں ہے ، اگر کوئی متبادل راستہ ہے تو وہ صرف جنگ ہے تاہم دونوں ممالک کسی جنگ کے متحمل نہیں ہوسکتے ۔ انہوں نے کہاکہ کچھ ایسی طاقتیں ضرور ہیں جو پاکستان اور بھارت کے درمیان امن نہیں چاہتیں اگر یہ طاقتیں جیت گئیں تو پھر ہم دہشت گردوں کے ہاتھوں کھلونا بن سکتے ہیں جس کے بعد تباہی کے سوا کچھ حاصل نہیں ہوگا ۔ انہوں نے کہاکہ ہمیں پڑوسی ملک کے ساتھ فیصلہ کن بات چیت کرنا ہوگی کہ آیا وہ دہشت گردی کے معاملے پر بھارت کے تحفظات کو دور کرنے کےلئے تیار ہے یا نہیں ۔ سلمان خورشید نے کہا کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان کئی ایک تنازعات ضرور ہیں جن پر بات ہونی چاہیے تاہم اس سلسلے میں راتوں رات مذاکرات کامیاب بھی نہیں ہو سکتے لہٰذا ہمیں آگے بڑھنا ہوگا اور اسی صورتحال کو برقرار رکھنا ہوگا ۔انہوں نے کہاکہ اپنے پاکستانی ہم منصب کے ساتھ بھی ایک نہیں دو بار ملاقات کی ہے جس میں واضح کیا گیا ہے کہ مذاکرات کے ذریعے ہی تمام مسائل حل ہوسکتے ہیں ۔انہوں نے کہاکہ بھارت نے ہمیشہ اس بات کو ترجیح دی ہے کہ پاکستان کے ساتھ بات چیت کو بامقصد بنایا جائے ۔ سلمان خورشید نے مزید کہا کہ پاکستان کے ساتھ تعلقات ہر صورت بہتر بنانا ہونگے ، ہم چاہتے ہیں کہ کچھ پیش رفت پاکستان کی جانب سے ہو اور کچھ ہماری طرف سے ۔ انہوں نے کہاکہ دہشت گردی ایک بہت حساس معاملہ ہے اس ناسور سے چھٹکارے کےلئے پھونک پھونک کر قدم رکھنا ہونگے ۔

مزید : بین الاقوامی


loading...