افسران کے مابین رابطوں کا فقدان ، لاہور میں غیر قانونی تعمیرات عام ، تجاوزات کی بھرمار

افسران کے مابین رابطوں کا فقدان ، لاہور میں غیر قانونی تعمیرات عام ، تجاوزات ...

  

لاہور(جاوید اقبال) میٹرو پولیٹن کارپوریشن اور زونوں کے ڈپٹی مئیرز اور افسروں میں کوآرڈنیشن کے فقدان سے لاہور مسائلستان بن گیا ہے گزشتہ تین ماہ کے دوران ضلع اور زونوں کے افسرون میں رابطے کا خلاء دورکرانے کے لئے مرکزی سطح پر ایک بھی مشترکہ اجلاس نہیں ہو سکا اور نہ ہی رابطہ کمیٹیوں کی تشکیل عمل میں آ سکی جس کے باعث شہر کے گلی کوچے ایک طرف مسائل کی نرسریوں میں تبدیل ہو گئے ہیں تودوسری طرف ریونیو کی مد میں ضلعی خزانے کو کروڑوں کا ٹیکہ بھی لگ رہا ہے نقشہ جات، تجاوزات، رجسٹریشن سمیت دیگرمدوں میں حاصل ہونے والی آمد ن قومی خزانے میں جانے کی بجائے افسروں کی مبینہ طو پرذاتی جیبوں میں جا رہی ہے یہاں تک کے میٹرو پولیٹن کارپوریشن اور زونوں میں فنانس سے متعلقہ اختیارات بھی طے نہیں پا سکے جس کا قابل ذکر پہلو یہ ہے کہ زونوں کو تجاوزات کے خلاف آپریشن کرنے کے لئے گاڑیوں میں پٹرول اور ڈیزل ڈلوانے کے فنڈز دئیے گئے ہیں اور ن ہی اختیارات دونوں اطراف سے اپنے اپنے اختیارات اور من مانی سے شہر مسائلستان بن کر سامنے آگیا ہے فقدان کا یہ عالم ہے کہ ضلع اور زونوں میں تجاوزات ہٹانے کے لئے آپریشن کس نے کرنا ہے یہ معاملات بھی ابھی تک طے نہیں ہو سکے اس طرح سے شہر کے نو ٹاؤنوں میں تجاوزات کے انبار لگ چکے ہیں اور جرمانوں کی بجائے زونو ں کا عملہ تجاوزاتیوں سے ماہانہ بنیادوں پر نذارنے وصول کررہا ہے اس صورت حال کے باعث شہر کے بازار، سڑکیں، چوراہے،سروس روڈ اور فٹ پاتھوں پر عارضی بازار ہی بازار ہیں۔ دوسری طرف شہر میں پابندی کے باوجود گلی کوچوں میں بھینسوں کی بھرمار اور تعمیراتی قوانین کی بھی کھلم کھلا خلاف ورزیاں ہو رہی ہیں اور نقشہ جات کی مد میں نذرانے لئے جارہے ہیں اور نقشہ کی فیسیں وصول کی جارہی ہیں اسی طر ح سٹریٹ لائٹس بھی نظر نہیں آرہیں ۔ اس حوالے سے وزیر بلدیا ت منشا اللہ بٹ سے بات کی گئی تو انہوں نے کہا کہ ضلع،ٹاؤن اور تحصیل کونسلوں کے اپنے اپنے اختیارات ہیں لیکن کوآرڈنیشن ضروری ہے لیکن ان میں اگر رابطے کا فقدان ہے تو اس کو دور کروائیں گے یہ دور نہ ہونے سے مسائل بڑھتے ہیں اس کے حل کے لئے جلد ہی کو آرڈنیشن کمیٹیاں تشکیل دیدی جائیں گی۔

وزیر بلدیات

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -