چھ ملکی سپیکرز کانفرنس ختم،پاکستان،چین ،روس ،ترکی ،ایران اور افغانستان کا پالیمانی اتحاد قائم کرنے پر اتفاق

چھ ملکی سپیکرز کانفرنس ختم،پاکستان،چین ،روس ،ترکی ،ایران اور افغانستان کا ...

اسلام آباد (صباح نیوز) پہلی چھ ملکی تین روزہ سپیکرز کانفرنس کامیابی سے اختتام پذیر ہوگئی ،روس چین پاکستان ترکی ایران اورافغانستان نے مل کر امریکی دھمکیوں کو مستردکردیاہے، پہلی چھ ملکی سپیکرزکانفرنس کے ذریعے امریکہ کو سخت پیغام دیدیا گیا اور خطے میں نئے پارلیمانی بلا ک کے قیام کے امکانا ت روشن ، راہ ہمواراورپاکستان کو اس بارے میں حمایت کا عندیہ دیدیا گیا ہے ،پارلیمانی بلاک سامراجی قوتوں کیخلاف مشترکہ لائحہ عمل ترتیب دینے پر مشاورت کرے گا مناسب موقع پر اس اتحاد کا اعلان کر دیا جائے گا ، تجویزپاکستان کے سپیکرقومی اسمبلی نے دی تھی خطے کے دیگر ممالک نے اس تجویز کو پذیرائی دی ، پاکستان، چین، روس، ترکی، ایران اور افغانستان کے مابین پارلیما نی اتحاد قائم ہوگا۔استعماری ایجنڈے کیخلاف مشترکہ لائحہ عمل بنایا جائے گا اور اپنے وسائل کو اپنے کنٹرول میں رکھنے ایک دوسرے کی سلامتی کے تحفظ قریبی رابطوں کو فروغ اور تعاون کی سازگارفضا میں ہر شعبے بشمول معیشت و دفاع میں تعلقات کو مضبوط کیا جائے گا ۔پارلیمانی رپورٹس کے مطابق کانفرنس میں شریک تمام ممالک کے مابین پارلیما نی اتحاد قائم کرنے کی تجویز پر اصولی اتفاق پایا گیا ، پاکستان، چین، روس، ترکی ،ایران، افغانستان کی سپیکرز کانفرنس کی ان سائیڈ نشستوں میں تجویز پر بات چیت اور مشاورت بھی ہوئی ہے ،غیررسمی طورپر اتفاق ہوگیا ہے اعلان کسی بھی وقت متوقع ہے پارلیمانی بلاک کی سب سے زیادہ حمایت ترکی اور روس کی طرف سے آئی ہے دیگر ممالک نے بھی تجویز کو انتہائی مثبت قرار دیا ہے۔

مزید : کراچی صفحہ اول


loading...