چکوال،قصبہ دمال کی لائق خاتون ٹریفک حادثہ میں جاں بحق

چکوال،قصبہ دمال کی لائق خاتون ٹریفک حادثہ میں جاں بحق

چکوال(ڈسٹرکٹ رپورٹر) پسماندہ قصبہ دمال کی ایک ذہین، لائق خاتون ٹریفک حادثے میں جاں بحق ہوگئی۔ سندھ رینجرز سے ریٹائرڈ سپرنٹنڈنٹ محمد امیر منہا س اپنی بیٹی ناظمہ بتول اور اہلیہ کے ہمراہ راولپنڈی سے چکوال آرہے تھے کہ مندرہ کے قریب ساہنگ کے مقام پر کار کو حادثہ پیش آیا جس کے نتیجہ میں فاطمہ بتول زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے جاں بحق ہوگئی۔ فاطمہ بتول نے باٹنی میں پی ایچ ڈی کیا تھا۔ ایم ایس سی اور ایم فِل میں گولڈ میڈل حاصل کیا۔ امریکہ کی فلوریڈا یونیورسٹی میں پی ایچ ڈی میں ریسرچ کی اور وہ باٹنی تنظیم کی ممبر تھی۔ فاطمہ بتول کے 32ریسرچ پیپرز مختلف جرنل میں شائع ہوچکے ہیں۔ فاطمہ بتول نے پنجاب پبلک سروس کے ذریعے اسسٹنٹ پروفیسر کا اہتمام دیا اور کامیاب ہوئی، اس کی پوسٹنگ اسلام پورہ لاہور میں بطور اسسٹنٹ پروفیسر ہو چکی تھی کہ اس المناک حادثے نے اس نوجوان بچی او رپورے خاندان کو غم کے اندوہناک سمندر میں غرق کیا ہے۔ حادثہ تین ماہ قبل پیش آیا ۔ ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ رینجرز محمد امیر منہاس نے پنجاب حکومت سے اپیل کی ہے کہ ان کی ذہین اور لائق بچی کیساتھ جو حادثہ پیش آیا اس کے تمام اہل خاندان اس وقت عجیب صورتحال سے دوچار ہیں اور پنجاب حکومت کی نظر کرم کے منتظر ہیں کہ ان کی لائق اور ذہین بیٹی کی بعد از مرگ حوصلہ افزائی ہونی چاہیے۔ امیر منہاس نے بتایا کہ ماہ نومبر میں بیٹی کی شادی بھی طے تھی۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...