چیئرمین نیب جسٹس جاوید اقبال کی زیرصدارت اجلاس، مقررہ وقت میں 900ارب روپے کی انکوائریز مکمل نہ ہونے پر جواب طلب

چیئرمین نیب جسٹس جاوید اقبال کی زیرصدارت اجلاس، مقررہ وقت میں 900ارب روپے کی ...
چیئرمین نیب جسٹس جاوید اقبال کی زیرصدارت اجلاس، مقررہ وقت میں 900ارب روپے کی انکوائریز مکمل نہ ہونے پر جواب طلب

  

اسلام آباد (ویب ڈیسک) قومی احتساب بیورو(نیب) کے چیئرمین جسٹس جاوید اقبال نے نیب ہیڈکوارٹر میں ایک اجلاس کی صدارت کی جس میں نیب کی کارکردگی کا جائزہ لیاگیا۔

چیئرمین نیب نے مختلف ریجنل بیوروز میں اس وقت جاری تقریباً499انکوائریوں ، 287انوسٹی گیشنز کے بارے میں ہدایت کی کہ بتایاجائے کہ یہ انکوائریاں اور انوسٹی گیشنز کتنے عرصے سے نیب کے مختلف ریجنل بیوروز میں جاری ہیں اور پہلے سے طے شدہ قانون کے مطابق 10ماہ کے وقت کے اندر یہ انکوائریاں اور انوسٹی گیشنز منطقی انجام تک کیوں نہیں پہنچائیں گئیں تاکہ ان کو بدعنوانی کے ریفرنس کی صورت میں معززاحتساب عدالتوں میں دائر کیاجاتا۔

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ’’لائیو ٹی وی‘‘ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔

نیب اعلامیہ کے مطابق اس وقت نیب کے تقریباً1138بدعنوانی کے ریفرنس زیرسماعت ہیں جن میں نیب لاہور کے 347ریفرنس، نیب کراچی کے 275، نیب خیبرپختونخوا کے 185ریفرنس، نیب بلوچستان کے 97، نیب راولپنڈی کے 171ریفرنس ، نیب ملتان کے 34اور نیب سکھر کے 29ریفرنس معزز احتساب عدالتوں میں زیرسماعت ہیں ۔ قومی احتساب بیورو کے چیئرمین جاوید اقبال نے کہاہے کہ ان مقدمات کی جلد سماعت کیلئے متعلقہ احتساب عدالتوں میں درخواستیں دائر کی جائیں تاکہ بدعنوانی عناصر سے قوم کی لوٹی گئی تقریباً900ارب روپے کی خطیر رقم برآمد کرکے قومی خزانہ میں جمع کرائی جائے اور ساتھ ساتھ بدعنوانی عناصر کو معزز احتساب عدالتوں سے قانون اور شواہد کی بنیاد پر سزا دلوائی جاسکے۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -بزنس -