”اپنی بکواس بند کرو ابھی۔۔۔“ زید حامد نے کشمیر کو بھارت کو اٹوٹ انگ قرار دینے والی بھارتی صحافی کی ”بینڈ“ بجا دی، ویڈیو نے سوشل میڈیا پر دھوم مچا دی

”اپنی بکواس بند کرو ابھی۔۔۔“ زید حامد نے کشمیر کو بھارت کو اٹوٹ انگ قرار ...
”اپنی بکواس بند کرو ابھی۔۔۔“ زید حامد نے کشمیر کو بھارت کو اٹوٹ انگ قرار دینے والی بھارتی صحافی کی ”بینڈ“ بجا دی، ویڈیو نے سوشل میڈیا پر دھوم مچا دی

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان نے انسانی ہمدردی کی بنیاد پر سزائے موت پانے والے بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو کی والدہ اور اہلیہ کیساتھ ملاقات کروائی جو بھارتیوں کو ہضم ہونے میں نہیں آ رہی ہے اور اس میں بھی سازش کا پہلو نکالنے اور پاکستان کیخلاف زہر اگلنے کا سلسلہ جاری ہے۔

یہ بھی پڑھیں۔۔۔”سدھر جاﺅ اور کلبھوشن کو چھوڑ دو ورنہ مٹ جاﺅ گے۔۔۔“ بھارتی نے لائیو پروگرام میں یہ بات کہی تو طارق پیرزادہ نے زبردست جواب دے کر اس کا منہ بند کر دیا، ویڈیو نے سوشل میڈیا پر دھوم مچا دی

اس ملاقات سے پہلے پاکستان اور بھارت کے کئی نیوز چینلز پر ٹاک شوز ہوئے جن میں پاکستانی اور بھارتی تجزیہ کاروں و صحافیوں نے بھی شرکت کی۔ ایسے ہی ایک پاکستانی ٹاک شو میں زید حامد نے بھارتی خاتون صحافی کی ”بینڈ“ بجا دی جس کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہو گئی ہے۔

معروف صحافی و سینئر تجزیہ کار نصرت ملک نے اس معاملے پر گفتگو کیلئے اپنے پروگرام میں دفاعی تجزیہ کار زید حامد، بھارتی صحافی شیتل راجپوت اور ماہر بین الاقوامی امور ریما عمر کو دعوت دی۔

نصراللہ ملک نے سب سے بھارتی صحافی شیتل راجپوت سے سوال کیا کہ ”کلبھوشن یادیو تک انسانی ہمدردی کی بناءپر رسائی دی گئی ہے اور اس میں والدہ اور ان کی اہلیہ بھی ہیں اور ڈپٹی ہائی کمشنر بھی ہوں گے تو اسے مجموعی طور پر ہندوستان میں کیسا دیکھا جا رہا ہے اور آپ اسے کیسے دیکھ رہی ہیں؟“

شیتل راجپوت نے جواب دیتے ہوئے کہا کہ ” یقینی طور پر یہ ایک اچھا اقدام ہے لیکن میں یہ ضرور کہوں گی کہ دیر سے یہ کام ہوا ہے کیونکہ بھارت نے وزارت خارجہ کے ذریعے کئی مرتبہ درخواست دی تھی کہ ان کی والدہ اور اہلیہ کو ویزہ دیا جائے لیکن بالآخر ان کی ملاقات ہو گی تاہم یہ اچھا اور خوش آئند فیصلہ ہے۔“

اس دوران شیتل راجپوت نے بنگلہ دیش کے معاملے پر بھی بات کی اور کہا کہ مودی نے بنگلہ دیش کے دورے کے دوران بنگلہ دیش توڑنے کی بات نہیں کی تھی بلکہ انہوں نے بنگلہ دیش کی آزادی کی بات کی تھی اور وہ خودمختار ملک بنا جو ایک تاریخ ہے، اس میں کوئی غلط نہیں ہے کہ بنگلہ دیش 1971ءمیں پاکستان سے آزاد ہوا۔

زید حامد یہ تمام باتیں بڑے آرام سے سنتے رہے البتہ جب انہوں نے بنگلہ دیش کی آزادی کی بات کی تو وہ طنزیہ انداز میں مسکرائے ضرور مگر پھر بھی خاموش ہی رہے۔ جس کے بعد شیتل راجپوت نے کشمیر کی بات بھی شروع کر دی اور اسے بنگلہ دیش کیساتھ ملانا شروع کر دیا۔

شیتل راجپوت کیساتھ کچھ دیر اور گفتگو کے بعد میزبان نصراللہ ملک نے زیادہ حامد سے گفتگو کا آغاز کیا اور سوال پوچھا کہ ”ابھی ہم دیکھ رہے ہیں کہ عالمی عدالت انصاف میں اس سارے معاملے کو ہندوستان لے کر گیا اور اب جو یہ ملاقات ہو رہی ہے تو اس کیس پر ملاقات کے کیا اثرات مرتب ہو سکتے ہیں۔“

زید حامد کچھ اس طرح گویا ہوئے کہ ”آپ نے جو سوال پوچھا، اس کا جواب دینے سے پہلے آپ کے پہلے مہمان کی بات پر یہ کہوں گا کہ ہم بدقسمتی سے ایک ایسے ہمسائے کیساتھ ڈیل کر رہے ہیں جو جھوٹا ہے۔ جو بات کھلا سچ ہے کہ بھارتی فوج نے مداخلت کی اور پاکستان کے ایک بازو کو توڑ دیا، یہ اس کی تردید کر رہے ہیں کہ جیسے اس میں بھارت کا کوئی کردار ہی نہیں ہے۔ مودی کے الفاظ تھے کہ مکتی باہنی کے ساتھ ہر بھارتی فوجی نے اپنا خون بہایا۔

بین الاقوامی قوانین کے خلاف پاکستان پر اس حملے کو ایسا ڈرامہ بنا کر پیش کیا جاتا ہے کہ جیسے کچھ ہوا ہی نہیں ہے۔ اور پھر جو کشمیر کے بارے میں انہوں نے بات کی میں اس کی بھی سختی سے تردید کرتا ہوں۔ کشمیر کوئی ان کا اٹوٹ انگ نہیں ہے، ہم تلوار کے زور پر اسے لے لیں گے۔“

یہ بھی پڑھیں۔۔۔”یہ توبہ توبہ کا مقام ہے کیونکہ۔۔۔“ کلبھوشن کی والدہ اور اہلیہ سے ملاقات کے دوران ایسا کام ہو گیا کہ نجی ٹی وی کا رپورٹر ٹی وی پر بار بار کان پکڑ کر توبہ کرتا رہا، ویڈیو نے سوشل میڈیا پر دھوم مچا دی

زید حامد کی جانب سے یہ بات ہونے پر شیتل راجپوت نے مداخلت شروع کر دی جس پر زید حامد بھڑک اٹھے اور کہا کہ ”جب میں بات کر رہاہوں تو کیا آپ خاموش رہ سکتی ہیں؟جب آپ گفتگو کر رہی تھیں تو میں نہیں بولا تھا۔“ انہوں نے یہ جملہ کئی بار دہرایا مگر شیتل راجپوت خاموش نہ ہوئیں۔

بار بار کہے جانے پر بھی جب شیتل خاموش نہ ہوئیں تو زید حامد نے کہا ”جب آپ غلط معلومات پھیلا رہی تھیں اور جھوٹ بول رہی تھیں تو میں نہیں بولا تھا، برائے مہربانی اب جب میں بول رہا ہوں تو اپنی بکواس بند رکھیں اور میری گفتگو میں مداخلت نہ کریں۔“

۔۔۔ویڈیو دیکھیں۔۔۔

مزید :

قومی -ڈیلی بائیٹس -