پاکستان میں آج مکمل سورج گرہن، ماہرین نے شیشے، چشمے ، کلر فلم کے ذریعے دیکھنے سے منع کردیا

پاکستان میں آج مکمل سورج گرہن، ماہرین نے شیشے، چشمے ، کلر فلم کے ذریعے دیکھنے ...
پاکستان میں آج مکمل سورج گرہن، ماہرین نے شیشے، چشمے ، کلر فلم کے ذریعے دیکھنے سے منع کردیا

  



لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان سمیت دنیا کے کئی ممالک میں جمعرات کو رواں سال کا آخر مکمل سورج گرہن ہوگا۔

محکمہ موسمیات کے مطابق پاکستان میں سورج گرہن صبح 7 بج کر 30 منٹ پر شروع ہوگا اور یہ 8 بج کر 37 منٹ پر عروج پر پہنچ جائے گا۔ سورج گرہن دوپہر ایک بج کر 6 منٹ پر ختم ہوجائے گا۔

یہ گرہن اس لحاظ سے منفردہے کہ سورج کو ایسا گرہن 118 برس بعد لگنے جارہا ہے، آج ہونے والا سورج گرہن اپنی نوعیت کا منفرد دائرہ نما سورج گرہن ہوگا ، اس سال سورج گرہن کو رنگ آف فائر کا نام دیا گیا ہے، پاکستان کے علاوہ جمعرات کو ہونے والا سورج گرہن سعودی عرب، قطر ، متحدہ عرب امارات، عمان، انڈیا ، سری لنکا ، ملائیشیا، اندو نیشیا، سنگا پور ، جنوبی مریانا آئی لینڈز اور گوام میں بھی دیکھا جاسکے گا۔

ماہرین نے تنبیہہ کی ہے کہ گرہن لگنے کے دوران سورج کا براہ راست نظارہ نہ کریں بلکہ احتیاطی تدابیر اختیار کریں ۔ ماہرین کے مطابق سورج کا 99 فیصد حصہ چاند کے پیچھے چھپ جائے گا اور صرف ایک فیصد ہی روشنی فراہم کر رہا ہوگا، اس ایک فیصد حصے سے نکلنے والی روشنی آنکھوں کیلئے انتہائی نقصان دہ ہوگی۔ ماہرین نے ہدایت کی ہے کہ مدھم شیشے ، دھوپ کے چشمے ، فوٹوگرافک فلٹر، کلر فلمز وغیرہ کے ذریعے سورج دیکھنے سے منع کیا ہے۔اگر کوئی شخص آج کا سورج گرہن دیکھنا چاہتا ہے تو اس کو پن ہول کیمرے یا مناسب جگہ پر رکھی گئی ٹیلی سکوپ کے ذریعے دیکھنا چاہیے۔

مزید : اہم خبریں /ماحولیات