پیرول ایکٹ 2019ء کی منظوری احسن اقدام، زوار حسین وڑائچ 

پیرول ایکٹ 2019ء کی منظوری احسن اقدام، زوار حسین وڑائچ 

  



لا ہو ر (کر ائم رپو رٹر)صوبائی وزیر جیل خانہ جات زوار حسین وڑائچ نے پنجاب حکومت کی جانب سے پیرول ایکٹ 2019ء اور گڈکنڈکٹ پرزنرزپروبیشنل ریلیز ایکٹ 1926میں ترامیم کی منظوری کو ایک احسن اقدام قرار دیا ہے جس سے گڈکنڈکٹ کا مظاہرہ کرنے والے قیدی کی پیرول پر رہائی یا اس کا خاتمہ پیرول بورڈکی سفارش کے بغیر نہیں ہوگا- صوبائی وزیر نے کہا کہ قیدی کو والدین، بہن، بھائی اور بیوی یا شوہر کی وفات کے علاوہ کسی ایسے شخص کے مرنے پر بھی پیرول پر رہائی مل سکے گی جس نے اس کی پرورش کی ہو۔مزیدبرآں جیل اسیر کو بہن،بھائی اور بچوں کی شادیوں کے موقع پر پیرول پر رہائی مل سکے گی، ڈپٹی کمشنر ایک دن جبکہ حکومت پنجاب 7 دن تک پیرول پر رہائی دے سکے گی۔انہوں نے کہا کہ نئی ترمیم کے مطابق حکومت پیرول پر رہا ہونے والے قیدی کی نقل و حرکت پر جی پی ایس ٹریکنگ سسٹم کے ذریعے پابندی لگا سکتی ہے-زوار حسین وڑائچ نے مزید کہا کہ پیرول افسر کے پاس اختیار ہوگا کہ وہ قیدی پر نظر رکھنے کے علاوہ اس کی باقاعدہ مانیٹرنگ بھی کرسکتا ہے۔

مزید : علاقائی


loading...