چھپ چھپ کر ہوائی جہاز پر سفر کرنے والا سانپ

  چھپ چھپ کر ہوائی جہاز پر سفر کرنے والا سانپ

  



ولنگٹن(مانیٹرنگ ڈیسک) آسٹریلیا سے گزشتہ دنوں ایک اژدھا ہوائی جہاز میں چھپ کر نیوزی لینڈ پہنچ گیا۔ میل آن لائن کے مطابق یہ پرواز آسٹریلوی شہر برسبن سے نیوزی لینڈ کے شہر کوئنز ٹاؤن پہنچی جہاں جہاز جب لینڈنگ کے لیے نیچے آیا اور اس کے پہیوں سے ایک 14فٹ لمبا اژدھا نکل کر رن وے پر گر گیا۔ پہلے تو کسی کو اس اژدھے کی رن وے پر موجودگی کا علم نہ ہوا لیکن جب اگلی پرواز روانہ ہوئی تویہ اژدھا اس کے سامنے آ گیا۔اس پرواز کے پائلٹ نے کنٹرول ٹاور سے رابطہ کرکے بتایا کہ رن وے پر کوئی چیز موجود ہے۔ اس پر ایئرپورٹ کا عملہ وہاں پہنچا تو سب لوگ اس اژدھے کو دیکھ کر دنگ رہ گئے۔انہوں نے ریسکیور ورکرز کو بلایا جنہوں نے اس اژدھے کو پکڑا۔جب تحقیقات کی گئی اور سکیورٹی کیمروں کی فوٹیج دیکھی گئی تو معلوم ہوا کہ یہ آسٹریلیا سے آنے والی پرواز سے رن وے پر گرا تھا۔ اس انکشاف پر آسٹریلیا سے آنے والے اس طیارے کو اچھی طرح چیک کیا گیا کہ کہیں اس میں کوئی اور اژدھا موجود نہ ہو تاہم یہ اکیلا اژدھا تھا جو آسٹریلیا سے جہاز کے پہیوں میں لٹک کر نیوزی لینڈ آ پہنچا تھا۔ ابتدائی طور پر میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا کہ ایئرپورٹ کے عملے نے خود ہی اژدھے کو پکڑنے کی کوشش کی اور بیلچہ مار کر اس کا سر دھڑ سے الگ کر دیا تاہم ایئرپورٹ کے ترجمان نے اس خبر کی تردید کر دی۔ ترجمان نے بتایا کہ ’اژدھا زندہ تھا اور اسے پکڑنے کے لیے ریسکیوورکرز بلائے گئے جنہوں نے اسے نشہ آورانجکشن لگا کر پکڑا اور اپنے ساتھ لے گئے۔‘

سانپ

مزید : صفحہ آخر