کے پی کے بلاشبہ جنگ زدہ ہو پر ہم اسے ’پلاسٹک زدہ‘ نہیں دیکھ سکتے:مشتاق غنی

کے پی کے بلاشبہ جنگ زدہ ہو پر ہم اسے ’پلاسٹک زدہ‘ نہیں دیکھ سکتے:مشتاق غنی
کے پی کے بلاشبہ جنگ زدہ ہو پر ہم اسے ’پلاسٹک زدہ‘ نہیں دیکھ سکتے:مشتاق غنی

  



پشاور(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپیکر خیبر پختونخوا اسمبلی مشتاق احمد غنی نے کہا ہے کہہمارا صوبہ بلاشبہ جنگ زدہ ہو پر ہم اسے ’پلاسٹک زدہ‘ نہیں دیکھ سکتے،مضر صحت اورتحلیل نہ ہونے والے پلاسٹک کی وجہ سے زرعی زمین بنجر ہو رہی ہے،عوام پلاسٹک سے بنی اشیاء میں کھانے پینے کی چیزوں استعمال کرکے لاتعداد امراض میں مبتلا ہورہے ہیں جبکہ اسی پلاسٹک کی وجہ سے سیلاب کی صورت میں نکاسی کا سارا سسٹم خراب ہوجاتا اور گلیاں، سڑکیں کسی تالاب کا منظر پیش کرتی ہیں۔

تفصیلات کےمطابق مشتاق غنی نےصوبائی اسمبلی سیکرٹریٹ میں اجلاس کی صدارت کی  جس میں سرکاری حکام سمیت پلاسٹک بیگز مینوفیکچرنگ ایسوسی ایشن کے صدر نے بھی شرکت کی۔اس موقع پر پلاسٹک بیگز ایسوسی ایشن کے صدر نے شرکاء کو بتایا کہ  پلاسٹک انڈسٹری بند کرنے سے ہزاروں لوگ بے روزگار ہوجائینگے جبکہ ہمارا صوبہ پہلے سے جنگ زدہ ہے اورانڈسٹری کےحالات برےہیں جس پرسپیکرمشتاق غنی نےکہاکہ ہماراصوبہ بلاشبہ جنگ زدہ ہوپرہم اُسے پلاسٹک زدہ نہیں دیکھ سکتے،صوبائی وزیر اطلاعات شوکت یوسف ز ئی کی قیادت میں ایک کمیٹی پہلےہی اس مسئلے پر کام کر رہی ہے جو قانون سازی کیلئے اپنی سفارشات جلد ہی صوبائی حکومت کے سامنے پیش کرے گی۔سپیکر نے کہا کہ ہماری حکومت کسی بھی صورت میں نہیں چاہے گی کہ لوگوں کا روزگار چھینے مگر پلاسٹک انڈسٹری کو اس بات کی بھی اجازت نہیں دے سکتے کہ وہ مضر صحت مواد استعمال کرکے عوام کی صحت سے کھیلیں اور ماحول کو تباہ کریں.اس موقع پر سپیکر کو بتایا گیا کہ اس وقت مارکیٹ میں 50 مائیکرون سے بہت کم خام مال پلاسٹک میٹریل بنانے میں استعمال ہورہا ہے جبکہ پنجاب سے غیر معیاری اور ایران سے سمگل شدہ پلاسٹک بھی آرہا ہے جسکی وجہ سے مارکیٹ میں قابل تحلیل 50 مائیکرون کا نان ڈی گریڈیبل پلاسٹک استعمال میں نہیں آرہا۔سپیکر نے اس موقع پر کہا کہ پنجاب حکومت کو درخواست کی جائیگی کہ پنجاب میں بھی بائیو ڈی گریڈیبل مواد کے استعمال کا قانون خیبر پختونخوا کے طرز پر اپنایا جائے.اس کے علاوہ انہوں نے کہا کہ انتظامیہ، محکمہ ایکسائزوکسٹم کو اس حوالے سے سختی کرنی پڑے گی تاکہ صوبے میں غیر معیاری پلاسٹک کی درآمد بند ہو.

مزید : علاقائی /خیبرپختون خواہ /پشاور