آئندہ سال این سی اے کا کنٹرول وفاق سے پنجاب کو منتقل کر دیا جائے گا

آئندہ سال این سی اے کا کنٹرول وفاق سے پنجاب کو منتقل کر دیا جائے گا

لاہور(ایجوکیشن رپورٹر)18 ویں ترمیم کے بعدمحکمہ تعلیم کی وفاق سے صوبو ں کو منتقلی سے بہت سے سوالات جنم لے رہے ہیں ،نےشنل کالج آف آرٹس کی مثال ان میں سے ایک ہے،این سی اے کی وفاق سے پنجاب کو سپردگی کی بازگشت کے بعد اب محکمہ خزانہ پنجاب نے این سی اے انتظامیہ کو ایک خط لکھا ہے جس میں ان سے سالانہ بجٹ کی تفصیلات مانگی گئی ہیںپنجاب حکومت کے ذرائع نے بتایا ہے کہ آئندہ سال سے این سی اے لاہور اور اسکے سب کےمپس راولپنڈی کا انتظامی کنٹرول وفاق سے لیکر پنجاب کے حوالے کردیا جائے گاذرائع کے مطابق کالج انتظامیہ کا موقف ہے کہ این سی اے ملک کا قےمتی اثاثہ ہے،اور وہ سمجھتے ہیں کہ اسے وفاق کے کنٹرول میں ہی رہنا چاہیے،لیکن این سی اے کی پنجاب کو منتقلی کے بعد کالج کی ایلومنائی ایسوسی ایشن جس کی نمائندگی ملک کے ہر صوبے اور علاقے میں موجود ہے،نے اس فےصلے کی مخالفت کی ہے اوراس کےخلاف احتجاجی تحریک شروع کرنے پر غور کر رہی ہے ذرائع کے مطابق ایلومنائی ایسوسی ایشن سمجھتی ہے کہ این سی اے ملک بھر کے کلچر کو فروغ دےنے میں اپنا کردار اداکر رہا ہے،لیکن پنجاب کو منتقلی کے بعد یہ صرف ایک صوبے کی ملکیت ہو کر رہ جائے گاجو کسی صورت قبول نہیںذرائع نے مزید بتایا ہے کہ سابق وزیراعظم سید یوسف رضا گیلانی نے این سی اے کو یونیورسٹی بنانے کا بھی اعلان کیا تھا، جس پر آج تک عملدرآمد نہیں کیاجاسکا ڈپٹی سیکرٹری اکیڈمک ہائر اےجوکےشن علی ارتضیٰ نقوی نے کہا ہے کہ 18ویں ترمیم کے بعدمحکمہ تعلیم کو صوبو ں کے حوالے کردیا گیا ہے،لہذا این سی اے کی سپردگی کا معاملہ بھی اسی کاشاخسانہ ہے انہوں نے بتایا کہ ایڈےشنل چیف سیکرٹری پنجاب کی سربراہی میں محکمہ ہائر اےجوکےشن پنجاب،این سی اے اور دیگر سٹیک ہولڈرز سے ایک مےٹنگ ہو چکی ہے،جس میں این سی اے کی وفاق سے صوبے کو منتقلی کے ابتدائی پہلوﺅں پرنہ صرف غور کیا گیا بلکہ اس کو پنجاب کے حوالے کرنے کی پےش رفت پر بھی بات چیت کی گئی ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4