مقبوضہ کشمیر ‘سوائن فلو سے ایک مزید شہری چل بسا،ہلاکتوں کی تعداد9ہوگئی

مقبوضہ کشمیر ‘سوائن فلو سے ایک مزید شہری چل بسا،ہلاکتوں کی تعداد9ہوگئی

 سرینگر(کے پی آئی) مقبوضہ کشمیر مں سوائن فلو سے ہلاکتوں کا سلسلہ بدستور جاری ہے ،صورہ کے علاقہ میں سوائن فلومیں مبتلا ایک اور مریض کی موت واقع ہونے سے اس مہلک مرض سے مرنے والوں کی تعداد7 ہوگئی ہے جبکہ ایس ایم ایچ ایس میں ہوئی مشکوک اموات کو ملا کر یہ تعداد 9ہوجاتی ہے ۔صورہ میڈیکل انسٹی ٹیوٹ میں زیر علاج دو دیگر مریضوں کی حالت انتہائی تشویشناک بنی ہوئی ہے۔اس دوران 15مزید افراد کے ٹیسٹ مثبت آنے کے بعد وادی میں سوائن فلو سے متاثرہ افراد کی تعدادبڑھ کر153 تک پہنچ گئی ہے اور صورتحال ہر گزرتے دن کے ساتھ سنگین ہوتی جارہی ہے۔ادھرصورہ انسٹی چیوٹ میں تعینات50ڈاکٹروں اور نیم طبی عملے کے ارکان کو سوائن فلو کے ویکسین لگوائے گئے۔شیر کشمیرانسٹی چیوٹ آف میڈیکل سائنسز صورہ نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ انسٹی چیوٹ میں زیر علاج سوائن فلو کے ایک اور مریض کی موت واقع ہوئی ہے۔مذکورہ مریض کو دماغ کی نس پھٹنے کے بعد9فروری کو انسٹی چیوٹ میں داخل کرایا گیا تھا اور بعد میں اس کا H1N1ٹیسٹ بھی مثبت ثابت ہوااور بالآخر دم توڑ گیا۔اس طرح اب تک سوائن فلو سے لقمہ اجل بننے والوں کی تعداد9تک پہنچ گئی ہے۔ان میں سے7صورہ انسٹی چیوٹ جبکہ دو مریض صدر اسپتال میں دم توڑ بیٹھے۔ انسٹی چیوٹ کی طرف سے جاری کئے گئے ایک بیان میں بتایا گیا کہ سوائن فلو کے9مریضوں کا انسٹی چیوٹ کے علیحدہ وارڈ میں علاج و معالجہ کیا جارہا ہے جبکہ دو مریض ایسے ہیں جو انتہائی نگہداشت والے وارڈ میں وینٹی لیٹر پر زیر علاج ہیں اور ان کی حالت بدستور انتہائی نازک بنی ہوئی ہے۔ صورہ کے رابطہ عامہ آفیسر کی طرف سے جاری بیان کے مطابق سوموار کو حاصل کئے گئے نمونوں میں سے15کو H1N1کیلئے مثبت پایا گیا اور اس طرح سے اب تک متاثرین کی تعداد153تک پہنچ گئی ہے ۔ درایں اثنا منگل کو 230مریضوں کا سکمز سرائے میں قائم کئے گئے امراض تنفس کے او پی ڈی میں معاینہ کیا گیا ور ان میں 66افراد کے نمونے جمع کئے گئے جن کی رپورٹ جلدآنے کی توقع کی جا رہی ہے۔ پی آر او کے مطابق مطابق انسٹی ٹیوٹ میں زیر علاج سوائن فلو کے دو مزیدمریضوں کو رخصت کیا گیا ہے۔اس دوران اسپتال میں تعینات50ڈاکٹروں اور نیم طبی عملے سے وابستہ ارکان کو سوائن فلو کے ویکیسن لگوائے گئے۔اس دوران پری آر او کے بیان کے مطابق اگر چہ4ہزار N95ماسک اسپتال کو حاصل ہو چکے ہیں تاہم اس مرض کے لئے استعمال ہونے والی tamifluنامی دوا اب تک اسپتال کو حاصل نہیں ہو پائی ہے اور اس کے 4000سے7000ٹیبلٹ کا اب بھی اسپتال کو انتظار ہیں۔

مزید : عالمی منظر