قومی ٹیم میں میچ جتوانے والے کھلاڑی نہیں ہیں،رمیز راجہ

قومی ٹیم میں میچ جتوانے والے کھلاڑی نہیں ہیں،رمیز راجہ

 برسبین( نیٹ نیوز) پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان اور کمنٹیٹر رمیز راجہ نے کہا ہے کہ قومی ٹیم میں میچ جتوانے والے کھلاڑی نہیں ہیں اور ابتدائی 2 میچز ہارنے کے بعد پاکستانی ٹیم کی کوارٹر فائنل میں رسائی مشکل ہے۔برطانوی نشریاتی ادارے سے بات کرتے ہوئے رمیز راجہ نے کہا کہ میگا ایونٹ میں قومی ٹیم کو جیت کی اشد ضرورت ہے تاکہ کھلاڑیوں کا کھویا ہوا اعتماد بحال ہو اور اب اگلے مرحلے تک رسائی کے لئے پاکستانی ٹیم کو اچھے رن ریٹ کے علاوہ مخالف ٹیموں کے خلاف بڑے فرق سے جیت کی ضرورت پڑ سکتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس وقت پاکستان کی بولنگ بے جان ہے، ورلڈ کپ سے قبل سعید اجمل اور محمد حفیظ کے بولنگ ایکشن مشکوک قرار دے دیئے گئے جب کہ جنید خان بھی ان فٹ ہوکر میگا ایونٹ سے باہر ہوگئے جس کے باعث بولنگ اٹیک بری طرح متاثر ہوا۔رمیز راجہ کا کہنا تھا کہ بولنگ کے ساتھ ساتھ بیٹنگ کے مسائل بھی قومی ٹیم کو گھیرے ہوئے ہیں، ٹیم میں شامل سینئر بلے باز شدید ذہنی دباؤ کا شکار ہیں اور اب ٹیم میں کوئی میچ جتوانے والا کھلاڑی نہیں رہا۔ انہوں نے کہا کہ یونس خان کو بطور اوپنر کھلائے جانے کا قدم ٹیم میں جگہ بنانے کے طور پر اٹھایا گیا اور ٹیم انتظامیہ کے ذہن میں شاید یہ بات تھی کہ یونس خان کو اوپنر کے طور پر کھلا کر بہتر کامبینیشن تیار کیا جاسکتا ہے۔رمیض راجہ نے کہا کہ پاکستان کرکٹ ٹیم کو اس وقت متحد ہوکر کھیلنے کی ضرورت ہے کیونکہ اس وقت ٹیم کو ایک کامیابی کی تلاش ہے اور امید ہے کہ ایک کامیابی حاصل کرنے کے بعد اس کے حوصلے بلند ہوں گے اور اس کو ورلڈ کپ میں آگے بڑھنے میں مدد ملے گی انہوں نے کہا کہ اس وقت ٹیم کی کارکردگی پر پوری قوم کی طرح ہم بھی تشویش کا شکار ہیں اور ٹیم کے لئے دعا ہی کرسکتے ہیں لیکن اس کو بہت زیادہ محنت کی ضرورت ہے انہوں نے مزید کہا کہ اس ٹیم میں حوصلے کی ضرورت ہے ورنہ کھلاڑی ونر نہیں ہیں جو ٹیم کی جیت میں اہم کردار ادا کرسکیں لیکن اس کے باوجود اسوقت سب کھلاڑیوں کو ایک ہوکر کھیلنے کی اشد ضرورت ہے کیونکہ اب ٹیم کے پاس اس کے سوا کوئی اور چارہ نہیں ہے ۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی