پنجاب بھر میں کچی آبادیوں کو مالکانہ حقوق دینے کا فیصلہ

پنجاب بھر میں کچی آبادیوں کو مالکانہ حقوق دینے کا فیصلہ

 لاہور(ایم آئی بھٹی) وزیر اعلیٰ پنجاب کی ہدایت پر کچی آبادی پنجاب بھر میں مالکانہ حقوق دینے کا فیصلہ کر لیا گیا ہے۔اس حوالے سے ڈائریکٹر کچی آبادی ایل ڈی اے کو بھی ہدایت کر دی گئی ہے کہ کچی آبادی کے مکینوں کو مالکانہ حقوق دیئے جائیں ۔ابتدائی طور پر جو کچی آبادیاں 1985سے پہلے سے آباد ہیں ان کے مکینوں کو مالکانہ حقوق دیئے جا رہے ہیں ۔اس پر محکمہ ایل ڈی اے کچی آبادی ڈائریکٹوریٹ میں کام جاری ہے اور موضع گوہاوا تحصیل کینٹ ضلع لاہورمیں قائم پانچ کچی آبادیوں کی فہرست مرتب کی جارہی ہے۔جن کچی آبادیوں کو مالکانہ حقوق دینے کیلئے فہرستیں تیار کی جا رہی ہیں ان میں غوثیہ کالونی،مسجد میوں والی،محلہ ٹبہ گوہاوا ،کرسچئن کالونی نزد عید گاہ،محلہ گرین ایونیو چرچ پر مشتمل ہیں اس وقت تین سو سے زائد افراد کو مالکانہ حقوق دیئے جا رہے ہیں ۔جن کی لسٹ تیار کی جا رہی ہے اور بہت جلد ان کچی آبادیوں کے باسیوں کو مالکانہ حقوق دیئے جائیں گے۔واضح رہے یہ تمام کچی آبادیاں این اے 125وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق کے حلقے میں آتی ہیں۔مذکورہ کام ڈائریکٹر کچی آبادی ایل ڈی اے کی زیر نگرانی ہو رہا ہے اس سلسلے میں تمام فیلڈ سٹاف کی چھٹیاں بند کر دی گئی ہیں اور دن رات کام کیا جا رہا ہے تاکہ کچی آبادی کے مکینوں کو بر وقت مالکانہ حقوق دیئے جاسکیں ۔اس کے علاوہ وزیر اعلیٰ پنجاب کی ہدایت پر پنجاب بھر کی کچی آبادیوں کو بھی مالکانہ حقوق دیئے جا رہے ہیں جس کی نگرانی ڈائریکٹر جنرل پنجاب کچی آبادی کر رہے ہیں اور انہوں نے پنجاب بھر میں کچی آبادی سے متعلقہ افسران کو حکم دیا ہے کہ 1985تک کے یونٹوں کو مالکانہ حقوق دینے کا جلد انتظام کیا جائے تاکہ جلد سے جلد اس کام کو پایہ تکمیل تک پہنچایا جا سکے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1