انرجی ایفیشنٹ آلات سے بجلی کی بچت ہوسکتی ہے:ماہرین

انرجی ایفیشنٹ آلات سے بجلی کی بچت ہوسکتی ہے:ماہرین

 لاہور(کامرس رپورٹر)انرجی ایفیشنٹ آلات کا استعمال اور بجلی کی بچت بحران کو ختم کرنے میں معاون ثابت ہو سکتے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار پاور سیکٹر انجینئرز نے واپڈا ہاؤس میں منعقدہ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انرجی آڈٹ امپیکٹ اینڈ پراسپیکٹس کے موضوع پر یہ سیمینار انسٹیٹیوٹ آف الیکٹریکل اینڈ الیکٹرانکس پاکستان کے زیراہتمام منعقد کیا گیا۔ سیمینار سے افتتاحی خطاب میں ائی ای ای ای پی کے صدر اور ممبر بورڈ آف ڈائریکٹرز ( این ٹی ڈی سی) محسن ایم سید نے کہا کہ پاکستان اس وقت بجلی کے شدید بحران سے دوچار ہے اور انجینئرز اپنا مرکزی کردار ادا کرتے ہوئے ٹرانسمیشن نیٹ ورک کے مسائل سے نمٹنے کے لئے جدید ٹیکنالوجی پر مشتمل حل پیش کریں۔ اس کے ساتھ ساتھ موثر لاگت اور متبادل ذرائع سے بجلی کی پیداوار پر بھی توجہ دی جائے۔ جس سے لوڈ شیڈنگ میں کمی ہو سکے۔ انہوں نے کہا کہ گھروں میں لگے ہوئے یو پی ایس کو 2-5 کلو واٹ استعداد کے سولر پینل پر منتقل کرنے سے 3000 میگاواٹ تک بجلی کے شارٹ فال میں کمی لائی جاسکتی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ موثر لاگت سے بجلی کی پیداوار اور صنعتی شعبے کو بین الاقوامی منڈی میں مقابلے کی راہ ہموار کر سکتی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ حکومت سولر پارک بہاولپور اور ٹھٹھہ گھارو کوریڈور میں ہوا سے بجلی کی پیداوار میں اضافے کے لئے کوشاں ہے۔ سیمینار کے مہمان خصوصی قائم مقام منیجنگ ڈائریکٹر این ٹی ڈی سی انجینئر عبدالرزاق چیمہ اور فور برادرز گروپ کے چیئرمین انجینئر جاوید سلیم قریشی نے بھی خطاب کیا اور انجینئرز پر زور دیا کہ وہ پاور سیکٹر کی بہتری کیلئے اپنی ماہرانہ رائے اور تجربات کی بناء پر نئے آئیڈیاز پیش کریں جس سے موجودہ بحران سے چھٹکارا مل سکے۔ پیپکو کے سابق ایم ڈی انجینئر طاہر بشارت چیمہ نے اپنا ریسرچ پیپر پیش کرتے ہوئے کہا کہ حکومت کو امریکہ، تھائی لینڈ، بنگلہ دیش اور دیگر ممالک کی طرح انرجی ایفیشنٹ آلات اور گھروں میں استعمال ہونے والی الیکٹرونکس اشیاء کے حوالے سے قانون بنانا چاہئے۔  بجلی کی پیداوار کے ساتھ ساتھ ڈیمانڈ سائیڈ مینجمنٹ پر بھی توجہ دی جائے۔ انجینئر شاہد خلیل یو ای ٹی ٹیکسلا انجینئر ناصر محی الدین جنرل منیجر ٹیکنیکل ڈائمنڈ گروپ، انجینئر میاں سلطان محمود سیکرٹری جنرل آئی ای پی، انجینئر سہیل ممتاز باجوہ منیجر ڈیزائن این ٹی ڈی سی، انجینئر اخلاق احمد سی ای او ایپیسول، انجینئر کرنل ریٹائرڈ ممتاز حسین، ڈاکٹر ملک آزاد، انجینئر اعجاز ڈار اور انجینئر اسد محمود، جنرل منیجر ٹیکنیکل نے بھی سیمینار میں اپنے ریسرچ پیپر پیش کئے۔ اس موقع پر توانائی سیکٹر سے وابستہ پبلک اور پرائیویٹ یونیورسٹیز کے ڈیپارٹمنٹس، انڈسٹریز، توانائی سے منسلک ادارے، پاور سیکٹر کے نامور ماہرین، سکالرز اور سٹیک ہولڈرز کی بڑی تعداد موجود تھی۔

مزید : کامرس