پاک فوج کا دہشت گردوں کے خاتمے کیلئے اگلے ماہ سے آپریشن خیبر ٹو شروع کرنے کا فیصلہ

پاک فوج کا دہشت گردوں کے خاتمے کیلئے اگلے ماہ سے آپریشن خیبر ٹو شروع کرنے کا ...

 باڑہ(آن لائن ،اے این این) خیبر ایجنسی میں پاک فوج کا دہشت گردوں کے خاتمے کے لئے اگلے ماہ سے آپریشن’’خیبر ٹو‘‘ شروع کرنے کا فیصلہ ،افغان سرحد کے قریب خیبر ایجنسی کے باقی ماندہ علاقوں کو بھی دہشت گردوں سے پاک کیا جائے گا۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کمانڈنٹ خیبر رائفلز کرنل طارق حفیظ نے کہا کہ حکومت نے افغان سرحد کے ساتھ خیبرایجنسی کے باقی ماندہ قبائلی علاقوں میں دہشت گردوں کی مکمل سرکوبی کیلئے اگلے ماہ سے گزشتہ سال کے آپریشن خیبر ون کی طرح اب آپریشن خیبرٹو شروع کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ آپریشن خیبر ون کی کامیابی کے بعد اب دہشت گردوں اور شدت پسندوں کا مکمل قلع قمع کرنے کیلئے آپریشن خیبرٹو شروع کرنے کا فیصلہ کیاہے ۔ انھوں نے کہاکہ خیبر ٹو ملٹری آپریشن شروع کرنے کا مقصد وادی تیراہ میں چھپے دہشت گردوں کو نشانہ بنانا ہے ۔انہوں نے کہاکہ سکیورٹی فورسز نے وفاق کے زیر انتظام قبائلی علاقوں سمیت تمام خیبرپختونخوا کو دہشت گردوں سے پاک کرنے کا فیصلہ کررکھاہے ۔کرنل طارق حفیظ نے کہاکہ ہم کسی ایک بھی دہشت گردوں کو نہیں چھوڑیں گے جہاں جہاں بھی وہ چھپے ہیں ہرجگہ ان کا پیچھا کریں گے اور ان کے ٹھکانوں کو تباہ کرکے ان کی کارروائیوں کی صلاحیتوں کو ختم کردیں گے ۔انہوں نے کہاکہ 25بڑے شدت پسندوں کی گرفتاری کے بعد ہم نے خیبر ون آپریشن کے خاطرخواہ مقاصد حاصل کرلیے ہیں ۔انہوں نے کہاکہ سکیورٹی فورسز نے اب پاک سرزمین کو دہشت گروں سے پاک کرنے کا تہیہ کررکھاہے ۔انہوں نے کہاکہ اگلے ماہ سے طورخم بارڈر پر کمپیوٹرائزڈ سکریننگ سسٹم نصب کیا جائے اور افغانستان آنے اور جانے والوں کا سائنسی ڈیٹا مرتب کیا جائے گا ۔واضح رہے کہ آپریشن ضرب عضب کے دور ان اب تک تقریباً 2ہزار سے زائد دہشت گردوں کو ان کے انجام تک پہنچایا گیاہے

مزید : صفحہ اول