ہارس ٹریڈنگ روکنے کیلئے آئینی ترمیم کا فیصلہ درست ہے،حامد رضا

ہارس ٹریڈنگ روکنے کیلئے آئینی ترمیم کا فیصلہ درست ہے،حامد رضا

لاہور(اے این این )سنی اتحاد کونسل پاکستان کے چیئرمین صاحبزادہ حامد رضا نے کہا ہے کہ فوج دہشتگردی کے خلاف جنگ اور حکومت صرف زبانی جمع خرچ کررہی ہے۔طالبان ، القاعدہ اور داعش کو اسلام دشمن قوتوں کی پشت پناہی حاصل ہے۔ یہودی لابی حرمین شریفین کے گرد اپنے اکتیس اڈے قائم کر چکی ہے۔ہارس ٹریڈنگ روکنے کیلئے آئینی ترمیم لانے کا فیصلہ خوش آئند ہے۔سینیٹ کے الیکشن میں ضمیر کا سودا کرنے والے ممبران اسمبلی کو سیاست بدر کیا جائے۔گیس اور بجلی کے بعد پانی کا بحران آنے والا ہے۔موجودہ حکمرانوں کے پاس ملک چلانے کی صلاحیت نہیں ہے۔جمہوری نظام کے استحکام کیلئے ہارس ٹریڈنگ کا خاتمہ ضروری ہے۔ حکمران ہر منافع بخش کاروبار کو اپنی ملکیت بنانا چاہتے ہیں۔پاکستا ن کے عوام غریب اور اس کے لیڈرز امیر ہیں ۔جلال آباد میں قائم بھارتی قونصل خانہ پاکستان میں ہونے والی دہشتگردی میں ملوث ہے۔منی لانڈرنگ کے مجرم کا ملک کا وزیر اعظم ہونا بد قسمتی ہے۔پاکستانی سرمایہ تیزی سے بیرون ملک منتقل کیا جارہا ہے۔حکمران اپنے اور اپنے بیٹوں کے اثاثے پاکستان منتقل کریں ۔سٹیس کو کی حامی پارٹیاں پاکستان کی ترقی کے راستے میں رکاوٹ ہیں۔معصوم پاکستانی مسلسل بارہ سال سے آگ و خون کے کھیل میں جل مر رہے ہیں ۔عالمی طاقتیں پاکستان میں اپنی پراکسی وارز بند کریں ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے سنی علماء بورڈ کے زیر اہتمام علماء کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔

مزید : صفحہ آخر