حمید نظامی مرحوم نے آمریت کیخلاف جنگ میں اپنی زندگی قربان کی ،پرویز رشید

حمید نظامی مرحوم نے آمریت کیخلاف جنگ میں اپنی زندگی قربان کی ،پرویز رشید

لاہور (ایجوکیشن رپورٹر)وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات پرویز رشید نے کہا ہے کہ جمہوری پاکستان ہی قائد اعظمؒ کا پاکستان ہے اور اگر پاکستان سے جمہوریت کو ختم کر دیا جائے تو ایسا ہی ہے جیسے کسی شخص سے روح کو چھین لیا جائے، حمید نظامی مرحوم نے آمریت کے خلاف جنگ میں اپنی زندگی قربان کی اور پاکستان میں جمہوریت کی جدوجہد میں پہلے شہید حمید نظامی تھے۔ وہ حمید نظامی میموریل سوسائٹی کے زیر اہتمام ایوان اقبال میں یوم حمید نظامی کے سلسلہ میں منعقدہ خصوصی تقریب سے خطاب کر رہے تھے۔ اس موقع پر سابق وزیر خارجہ خورشید محمود قصوری‘ عارف نظامی‘ عطاء الحق قاسمی‘ ارشاد احمد عارف‘ سجاد میر اوریا مقبول جان سمیت دیگر دانشور و سینئر صحافی بھی موجود تھے۔وفاقی وزیر نے کہا کہ جمہوری روایات کی پاسداری اور ان کو زندہ رکھنے کی کاوش حمید نظامی مرحوم کی تحریروں اور اداریوں سے ملتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ جب مسلم لیگ میں خاص قسم کا کلچر فروغ پانے لگاتو اس کو نا پسند کرتے ہوئے حمید نظامی کی تحریریں گواہی دیتی ہیں کہ وہ مسلم لیگ میں بھی جمہوریت کے لئے آواز بلند کرتے تھے۔پرویز رشید نے کہا کہ حمید نظامی ایوب خان کی آمریت کے خلاف لکھتے اور جمہوریت کے حق میں لکھتے جس کی انہیں قیمت بھی ادا کرنا پڑتی۔ انہوں نے کہا کہ وہ اپنی تحریروں میں بار بار لکھتے تھے کہ ملک میں جمہوریت کے نہ ہونے کا سب سے زیادہ نقصان پاکستان کو ہو گا اور ان کی باتیں بعد ازاں سچ ثابت ہوئیں۔ انہوں نے کہا کہ 1962ء کے آئین میں اگر وہ شقیں نہ ہوتیں جس نے ہماری آزادیوں کو سلب کیا تو آج یہ وہی پاکستان ہوتا جو قائد اعظم کا پاکستان تھا۔ وفاقی وزیر نے کہا کہ دنیا میں ریاستوں کے نظریے یونیورسٹیوں سے جنم لیتے ہیں، وہ جدید ترین سائنسی علوم کی کلاسز سے نکالے جاتے ہیں لیکن پاکستان میں نظریہ سازی کی فیکٹریاں لگائیں گئیں جنہوں نے ہمیں نقصان پہنچایا۔ انہوں نے کہا کہ آج ہمیں قائد اعظم کے پاکستان کو حاصل کرنے کیلئے حمید نظامی مرحوم کے افکار پر بھی عمل کرنے کی ضرورت ہے۔ سینئر صحافیوں اور دانشوروں نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے حمید نظامی کی صحافت کیلئے انکی خدمات کو سراہا۔ پرویز رشید

مزید : صفحہ آخر