نواز شریف اپنی ناکامی چھپانے کے لیے اداروں کو بدنام کر رہے ہیں،نیب نے احد چیمہ کی گرفتاری قانون کے مطابق کی :پرویز خٹک

26 فروری 2018 (00:36)

نوشہرہ کینٹ(ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا پرویز خٹک نے کہا ہے کہ نواز شریف اپنی ناکامی چھپانے کے لیے اداروں کو بدنام کر رہے ہیں، احد چیمہ کی گرفتاری نیپ نے قانون کے مطابق کی ،احد چیمہ کی گرفتاری پر پنجاب کے سول سروینٹ کو سازش کے تحت کھڑا کیا جارہا ہے ،نوازشریف کرپشن کی پیداوار ہے جلد سلاخوں کے پیچھے ہوگا ،پختونوں اور اسلام کے ٹھیکیداروں نے عوام سے مذاق  کرتے ہوئے پختون قوم کا استحصال کیا،مولانا صاحبان نے پانچ سال میں کون سی اسلام کی خدمت کی؟چور اور چوکیدار کی اور سیاست چلنے نہیں دیں گئے،عوام سیاسی نوسربازوں کو آئندہ عام انتخابات میں نشان عبرت بنادیں،پی ٹی آئی کا جنون 2018 کے عام انتخابات میں ان تمام پارٹیوں کے اتحادوں کو چلتا کردے گا،ملک سے رشوت خوروں اور سیاسی ڈاکوؤں کا خاتمہ کئے بغیر خوشحالی نہیں آسکتی،تحریک انصاف آئندہ الیکشن میں کلین سویپ  کرے گی۔

 نوشہرہ  میں سوئی گیس کی افتتاحی تقریب اور میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئےپرویز خٹک نے کہاکہ گزشتہ کئی دہائیوں سے بے دریغ کرپشن اور لوٹ مار کی وجہ سے دُنیا بھر میں پاکستان کی بد نامی ہوئی،قومی مفاد میں فیصلہ سازی وقت کی اشد ضرورت ہے،اس سلسلے میں مزید غفلت کی گنجائش نہیں ،ہمیں بحیثیت قوم اپنی سوچ کو بدلنا ہو گا اور درست فیصلے کرنا ہوں گے ،یہی عمران خان کا قوم کیلئے پیغام اور تحریک انصاف کا وژن ہے جس پر باشعور عوام خصوصاً نوجوانوں نے بھر پور اعتماد کیا ہے، تحریک انصاف نوجوانوں کی جماعت ہے جس کا روایتی سیاسی جماعتوں سے موازانہ نہیں بنتا ، ساری جماعتیں متحد ہو کر بھی تحریک انصاف کا مقابلہ نہیں کر سکتیں ۔انھوں نے کہا کہ ترقیاتی کام صوبہ بھر میں جاری ہیں اور یہ حکومت کی ذمہ داری ہےعوام پر احسان نہیں۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان میں بنیادی مسئلہ عوام کو انصاف اور حقدار کو حق کی فراہمی کا ہے جس پر ماضی میں توجہ نہیں دی گئی،یہی وجہ ہے کہ عوام نے اداروں کی بحالی اور شفاف نظام کیلئے پاکستان تحریک انصاف پر اعتماد کیا، کیونکہ سیاسی مداخلت نے عوامی خدمت کے اداروں کو تباہ کر دیا تھا، ایک محدود طبقے کی خوشحالی کیلئے اداروں کو تباہ کرکے کروڑوں عوام کا جینا محال کر دیا گیا تھا،واحد عمران خان ہے جس نے سرمایہ دار طبقے کی اجارہ داری اور غریب دشمن نظام کے خلاف آواز بلند کی اور ملک گیر سطح پر جدوجہد کا آغاز کیاجس کے ثمرات آج دیکھے جا سکتے ہیں۔ پرویز خٹک نے کہاکہ اشرافیہ کی غریب دشمنی کا اندازہ اس امر سے بخوبی لگایا جا سکتا ہے کہ سرکاری تعلیمی اداروں کو بھی مجرم سیاستدانوں نے اپنے ذاتی مفادات کی خاطر تباہ کیاکیونکہ یہ لوگ چا ہتے ہی نہیں تھے کہ متوسط طبقے سے لوگ آگے آئیں جس کا نتیجہ یہ ہوا کہ ایک محدود طبقہ ملکی وسائل سے مستفید ہوتا رہا اور غریب دردر کی ٹھوکریں کھانے پر مجبور رہا ۔وزیراعلیٰ نے کہاکہ تعلیم کسی بھی قوم کی ترقی کیلئے بنیاد فراہم کرتی ہے مگر ہمارے ہاں ارادۃً ترقی کی اس بنیاد کو کھوکھلا کیا گیا ۔انہوں نے حیرت کا اظہار کیا کہ ماضی میں سرکاری سکولوں کیلئے تھرڈ ڈویژن میٹرک پاس اساتذہ بھرتی کئے گئے جو غریب کے ساتھ بہت بڑا ظلم تھا ،یہ واحد صوبائی حکومت ہے جس نے غریب کو معیاری تعلیم اور تربیت کی سہولت فراہم کرنے کیلئے میرٹ پر ہزاروں بھرتیاں کیں آج ایم اے اور ایم ایس سی نوجوان سسٹم کا حصہ بن رہے ہیں، ہم نے خیبرپختونخوا میں غریب کیلئے بھی مقابلے کی فضاء پیدا کردی ہے ،اب پرائیویٹ تعلیمی اداروں سے بچے سرکاری سکولوں میں آ رہے ہیں ۔

مزیدخبریں