پی ایس ایل کا دوسرا مرحلہ آج سے شروع: ملتان سلطان، پشاور زلمی کرکٹ جنگ کیلئے تیار، غیر ملکی کھلاڑیوں کا بھرپور استقبال: سٹیڈیم میں بینرآو یزاں

پی ایس ایل کا دوسرا مرحلہ آج سے شروع: ملتان سلطان، پشاور زلمی کرکٹ جنگ کیلئے ...

  



ملتان(نمائندہ خصوصی،وقائع نگار)پاکستان سپر لیگ کا دوسر ا مراحلہ آج سے شروع ہوگا ملتان سٹیڈیم سلطانز اور زلمی کی میزبانی کیلئے تیار ہے، تفصیل کے مطابق پاکستان سپر لیگ کا دوسرا مرحلہ آج سے ملتان اور کل روالپنڈی میں شروع ہوگا، ملتان میں ملتان سلطانز اور پشاور زلمی آمنے سامنے ہوں گے، گزشتہ روز دونوں ٹیموں نے بھرپور پریکٹس کی، شام ساڑھے 5 بجے سے رات نو بجے تک ٹیمیں فلڈلائٹ میں پریکٹس کرتی رہیں، بعدازں انہوں نے فٹبال بھی کھیلا، سخت سیکورٹی کی وجہ سے ٹیموں کو ہوٹل تک محدود کردیا گیا جبکہ سٹیڈیم میں بھی نیٹ پریکٹس کے علاوہ کسی جگہ جانے کی اجازت نہیں دی گئی، دونوں ٹیمں آج شام سات بجے میدان میں اتریں گی، دوسری طرف ملتان کرکٹ اسٹیڈیم میں پی ایس ایل کے تین میچوں کی میزبانی کے لیے تیار اور سیکورٹی کے فول پروف انتظامات مکمل کیے گئے ہیں اس ضمن میں ذپٹی کمشنر عامر خٹک کی زیرصدارت سرکٹ ہاوس میں پی ایس ایل میچز کے انتظامات کا جائزہ اجلاس ہوا جس میں اے ڈی سیز قمرالزمان قیصرانی،ہدایت اللہ، اسسٹنٹ کمشنرز عابدہ فرید،شہزاد محبوب اور احمد رضا نے شرکت کی انہوں نے کہا کہ پی ایس ایل کے میچز کے بہترین انتظامات کے لیے تمام صلاحیتیوں کو بروئے کار لایا جائے غیر ملکی کھلاڑیوں اور آفیشلز کی میزبانی اہلیان ملتان کے لیے قابل فخر بات ہے جنوبی پنجاب کے شائقین کرکٹ کو کھیل سے لطف اندوز ہونے کیلیے مثالی انتظامات کو ہر صورت یقینی بنایا جائیڈی سی آفس میں کنٹرول روم قائم کر دیا گیا ہے، ہوٹلز سے اسٹیڈیم تک روٹ پر 277 کیمرے لگا دئے گئے ہیں، عامر خٹک ملتان:کنٹرول روم میں پاک فوج، رینجرز اور پولیس کے فوکل پرسنز سیکیورٹی کی غرض سے مانیٹرنگ کریں گیروٹ پر لگائے گئے ساکت اور متحرک کیمروں کے ذریعے کسی بھی چیز کو ٹریک کیا جا سکے گاکھلاڑیوں کے اسٹیڈیم جانے اور آنے والے قافلوں کی لائیو مانیٹرنگ کی جائے گی پبلک پارکنگ کے انتظامات کی مانیٹرنگ کے لیے ایک آفیسر کو فوکل پرسن مقرر کیا جائیایم ڈی اے کے سٹاف کو پارکنگ ایریا میں تعینات کیا جائیپی ایچ اے کے ملازمین کی بھی پی ایس ایل انتظامات کے حوالے سے ڈیوٹیاں لگائی جائیں،عارضی ہسپتالوں اور میڈیکل کیمپس پر ادویات کی دستیابی کو یقینی بنایا جائیریسکیو 1122 قریبی اضلاع سے ایمبولینسز اور ریسکیور منگوانے کے انتظامات کو سٹینڈ بائی رکھے، ڈپٹی کمشنر ملتان:کرکٹ اسٹیڈیم جانے والے تمام روٹس سے تجاوزات کا صفایا کیا جائیاسٹیڈیم روٹ پر تمام اسٹریٹ لائٹس کی بحالی کو یقینی بنایا جائیہر محکمہ کو اپنی ذمہ داری انتہائی پرفیکٹ طریقے سے نبھانا ہو گی اسٹیڈیم کے اندر کسی کو گیس سلنڈرز لے جانے کی اجازت نہیں دی جائے گی، پی سی بی ٹکٹیں بلیک میں فروخت کرنیوالوں کی نشاندہی کرے تاکہ پولیس کاروائی کر سکے شائقین کرکٹ کو ٹکٹ فروخت کرنے کیلیے شہر کے مختلف حصوں میں کیمپ لگائے جائیں سیکیورٹی کی فراہمی کے لیے پی سی بی ٹکٹ کی فروخت کے لیے ضلعی انتظامیہ کی مشاورت سے کیمپ قائم کرے،پوری دنیا کے کرکٹ شائقین کی نظریں پی ایس ایل پہ لگی ہیں،میچز کے دوران پوری دنیا کا فوکس ملتان پر ہو گا،ڈیوٹی پر تعینات تمام افسران اور ملازمین کرکٹ میچز دیکھنے کے لیے ا?نیوالے تماشائیوں سے شائستگی سے پیش آئیں محکموں کے افسران اپنے سٹاف کو ڈیوٹی کی خوش اخلاقی سے ادائیگی بارے بریفنگ دیں۔ملتان سلطان کے کپتان شان مسعود نے کہا ہے کہ ھمارے لئے ملتان میں کھیلنا خوش آئند ھے ھم پر جو ش ھیں اچھی کرکٹ عوام کو دیکھنے کو ملے گی ھم تینوں میچز جیتنے کی کوشش کریں گے اسلام آباد نے ھمیں سیٹل نہیں ھو نے دیا لیکن اب ھم زبردست کم بیک کریں گے اور انشاء اللہ ھماری ٹیم کامیابیاں سمیٹے گی۔ شان مسعود نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مزید کہا کہ کوئیٹہ،پشاور اور کراچی تینوں اچھی ٹیمیں ھیں لیکن ھم پر عزم ھیں کہ تینوں میچ جیتیں۔پشاور کی بھی اچھی ٹیم ھے لیکن ھم کم بیک کریں گے میں اپنی پر فارمنس کے ساتھ ساتھ اپنے کھلاڑیوں کی پرفارمینس بھی اچھا کرنے کی کوششیں کر رھے ھیں تمام ٹیمیں ایک دوسرے کے پلئرز کے تجزیے لینے کے بعد پلئیر ٹو پلیئر پلاننگ کرتے ھیں ھم بھی ایسا ھی کر تے ھیں۔۔زیادہ تر کھلاڑی پہلی بار ملتان اسٹیڈیم میں کھیلیں گے، پہلی کوشش ہے ٹاپ 4 میں ائیں،،سب ٹیمیں جیتنے کے لئے میدان میں اترتی ہیں ، ہم اپنے ہوم کراؤڈ کے سامنے کھیلیں گے ہوم ایڈوانٹیج کا فائدہ اٹھائیں گے شان مسعود کا کہنا تھا کہ جنوبی پنجاب بھر کے لوگ لازمی میچ دیکھنے آئیں لوگ پر جوش ہیں مجھ سے ٹکٹیں مانگ رہے ہیں شائقین کرکٹ کو اچھی کرکٹ دیکھنے کو ملے گی کوشش ہوگی تمام میچز جیتیں۔ کرکٹ ویر ی ایشن کا کھیل ھے لمحہ بہ لمحہ میچ کی سچوئیشن بدلتی رھتی ھے. ٹونٹی ٹونٹی میں دو اوورز میں میچ بدل جاتا ھے۔ھماری ٹیم کے تمام کھلاڑی اپنی تمام صلاحیتوں کو بروئے کار لانے ھوے تینوں میچز کو یادگار بنا دیں گے۔ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ میری کپتانی پر بات کرنے والوں پر تو جہ دینے کے بجائے میں ٹیم کی کامیابی پر توجہ دیتا ھوں۔ مجھے سینئرز کا بہت فاہدہ پہنچتا ھے کیونکہ میں ان کی مشاورت سے فیصلے لیتا ھوں اور فیصلے لینے میں مجھے آسانی ھوتی ھے۔انہوں نے کہا کہ ھماری ٹیم میں زبردست ٹیم سپرٹ ھے۔کرکٹ کی بحالی پر پوری قوم کو مبارکباد دیتا ہوں اسٹیڈیم دنیا کے بہترین گراؤنڈز میں شامل ہے، امید ہے جلد انٹرنیشنل میچز بھی ملتان میں ہوں، سیکیورٹی کے بہترین انتظامات کئے گئے ہیں جس پر اداروں کا شکر گزار ہوں،،پچھلے میچ میں اسلام آباد نے ہمیں سیٹ نہیں ہونے دیا، کامران اکمل اس وقت بیسٹ اوپننگ بیٹسمین ہیں لیکن ھم تمام مخالف ٹیموں کے بیٹسمین اور باؤلرز کے خلاف مربوط پلاننگ کے ساتھ میدان میں اتریں گے۔سٹی ٹریفک پولیس ملتان کی جانب سے ملتان میں ہونیوالے پاکستان سپر لیگ کے کرکٹ میچز کے حوالے سے ٹریفک پلان جاری کر دیا گیا ہے۔ملتان کرکٹ اسٹیڈیم میچ دیکھنے کے لیے جانیوالوں کے لیے پارکنگ کا انتظام فاطمہ جناح ٹاؤن میں کیا گیا ہے۔ ٹریفک پلان کے مطابق ملتان شہر سے آنیوالے شائقین کرکٹ وہاڑی چوک سے فاطمہ جناح ٹاؤن کے بہاؤالدین زکریا گیٹ نزد پل نہر نوبہار سے پارکنگ ایریا میں داخل ہوں گے۔ وہاڑی اور خانیوال سے آنیوالے حضرات NLC بائی پاس اور بابر چوک کے ذریعے دنیا پور بائی پاس چوک سے ملحقہ گیٹ سے فاطمہ جناح ٹاؤن میں داخل ہونگے۔ اسی طرح مظفر گڑھ، شجاع آباد، بہاولپور اور لودھراں سے آنیوالے حضرات پارکنگ ایریا تک جانے کے لیے ہیڈ ڈمری سے ملحقہ گیٹ کے ذریعے فاطمہ جناح ٹاؤن میں داخل ہونگے۔ سٹیڈیم موڑ وہاڑی روڈ سے سٹیڈیم موڑ بدھلہ روڈ تک روڈ ہمہ قسم کی ٹریفک کے لیے بند رہے گا۔ اس حوالے سے شہر کے داخلی راستوں پر عوام الناس کی رہنمائی کے لیے بینرز بھی آویزاں کیے گئے ہیں۔ عوام الناس سے گزارش ہے کہ اپنی گاڑیوں کو مختص کردہ پارکنگ ایریا میں پارک کریں اور ڈیوٹی پر موجود ٹریفک وارڈنز سے تعاون کریں۔ضلعی پولیس نے پی ایس ایل فائیو ملتان کرکٹ سٹیڈیم میں سے منعقد ہونے والے کرکٹ میچ کے حوالے سے سیکیورٹی پلان جاری کر دیا گیا۔جس کے مطابق سٹی پولیس آفیسر ملتان محمد زبیر دریشک ملتان پولیس کی طرف سے کیے گئے تمام تر سیکیورٹی انتظامات کی نگرانی خود کر رہے ہیں۔فول پروف سیکیورٹی کو یقینی بنانے کے لئے 3 ہزار سے زائد پولیس افسران ڈیوٹی سر انجام دیں گے۔جن میں 01 ایس ایس پی، 07 ایس پیز، 17 ڈی ایس پیز، 42 انسپکٹرز، 391 اپر سبارڈینیٹس، 2538 کنسٹیبلان اور 75 لیڈی کنسٹیبلز ڈیوٹی پر ہونگے۔اسٹیڈیم آنے والے شائقین کو فور ٹیر سیکیورٹی پروسس سے گزارا جائے گا۔ٹکٹ رکھنے والے افراد کو مکمل چیکنگ کے بعد اسٹیڈیم میں داخل ہونے کی اجازت دی جائے گی۔سیکیورٹی کو فول پروف بنانے کے لئے 12 عدد واک تھرو گیٹس، 48 میٹل ڈیٹیکٹرز کے ساتھ تلاشی لی جائے گی۔ٹیم کی آمد کے وقت روٹس کو ہر صورت کلئیر رکھا جائے گا۔ ٹیم کو فول پروف سیکیورٹی میں اسٹیڈیم تک پہنچائیں گے۔اسٹیڈیم کے اندر اسپیشل اسٹیکر والی وی آئی پی گاڑیوں کو انٹری کی اجازت دی جائے گی۔اسٹیڈیم کے احاطے میں وی آئی پی گاڑیوں کو پارک کروایا جائے گا۔اس کے علاوہ 30 ریزروز اسٹینڈ ٹو ہونگی۔ قانون نافذ کرنے والے ادارے بھی فول پروف سیکیورٹی کو یقینی بنانے کے لیے اپنا کردار ادا کریں گے۔ملتان کرکٹ سٹیڈیم کی تکمیل کو20برس گذر گئے5ٹیسٹ میچز6ون ڈے انٹرنیشنل 2قومی ٹی کپ اور بیسیوں فرسٹ کلاس و دیگر ڈومیسٹک میچز کی نمائندگی کرنیوالے ملتان کرکٹ سٹیڈیم پہلی بار پی ایس ایل(PSL5)کی میزبانی کا اعزاز حاصل کررہا ہے۔26فروری کو ملتان سلطان اور پشاور زلمی،27فروری کو ملتان سلطان اور کراچی کنگز،29فروری کو ملتان سلطان اور کوئٹہ گلیڈی آیٹر ملتان سٹیڈیم پر مدمقابل ہوں گے۔ملتان سٹیڈیم کی تعمیر و تکمیل تاریخ کی جائزہ رپورٹ کے مطابق ملتان سٹیڈیم کی تعمیر کا سنگ بنیاد 80ء کی دہائی کے اوائل میں شہر سے کم و بیش 20کلو میٹر دور 25ایکڑ اراضی پر رکھا گیا تھا۔دو اڑھائی برس تک منصوبہ پر لاکھوں مالیت کے فنڈز سے کام جاری رہا۔بعد میں فنڈز ختم ہونے کے باعث منصوبہ پر تعمیراتی کام 15برس تعطل کا شکار رہا۔99ء میں نواز شریف کے دوسرے دور میں اس وقت کے وزیراعلی شہباز شریف کی صوبائی حکومت نے ملتان کے مسلم لیگی ممبر پنجاب اسمبلی مولوی سلطان عالم کی تحریک پر ملتان سٹیڈیم منصوبہ کی تکمیل کیلئے کروڑوں مالیت کی گرانٹ جاری کردی۔شہباز شریف نے ملتان سٹیڈیم کے تعمیراتی منصوبہ کے دوسرے سیشن کا افتتاح جولائی 99 ء میں خود ملتان آکر کیا اور ملتان کرکٹ ٹرسٹ قائم کیا ٹرسٹ کے نمبر صاحبزادی محمد ابراہیم کی تحریک پر میاں شہباز شریف نے سٹیڈیم کی تکمیل پر فیسٹیول کرکٹ میچ کھیلنے کا بھی اعلان کیا۔ایک ٹیم کی قیادت اس وقت کے وزیراعظم میاں نواز شریف اور دوسری ٹیم کی قیادت میاں شہباز شریف نے خود کرنا تھی۔تاہم سٹیڈیم کی تکمیل سے فیسٹیول میچ کھیلنے کا خواب اکتوبر99ء میں فوجی حکومت کے آجانے کے باعث حکمران میاں برادرز کے ادھورہ رہ گیا۔2000ء میں سٹیڈیم کی تعمیرات کھیلنے کے قابل ہونے تک مکمل ہوگئیں۔اگست 2001ء میں ملتان سٹیڈیم کی تاریخ کا پہلا ٹیسٹ میچ پاکستان اور بنگلہ دیش کے درمیان کھیلا گیا۔جس میں پاکستان نے ایک اننگز اور264رنز سے جیتاگگلی لیگ سپنر دینش کنیریا نے دونوں اننگز میں 6 چھ آؤٹ کیے اور مجموعی طور پر 94رنز کے عوض 12 آؤٹ کر کے مین آف دی میچ قرار پائے۔پاکستان کے 5بیٹسمینوں سعید انور۔توفیق عمر۔انضمام الحق۔محمد یوسف اور عبدالرزاق نے سنچریاں سکور کیں۔ملتان سٹیڈیم پر دوسرا ٹیسٹ میچ بھی پاکستان اور بنگلہ دیش کے درمیان 2003ء میں کھیلا گیا۔جوکہ پاکستان نے انضمام الحق کی کرشماتی سنچری(ناقابل شکست138رنز) کی بدولت صرف ایک وکٹ سے جیت لیا۔بنگلہ دیش کے باؤلر محمد رفیق نے 36رنز کے عوض 5آؤٹ کرکے اپنی باؤلنگ کو منوایا۔2004ء میں بھارت کی ٹیم 2004ء میں دوستی سیریز کھیلنے پاکستان آئی تو ٹیسٹ سیریز کا پہلا میچ ملتان سٹیڈیم پر کھیلابھارت نے یہ میچ ایک اننگز 52رنز سے جیتاسہواگ نے کیریئر اور بھارتی تاریخ کی پہلی ٹرپل سنچری(309رنز) سکور کی۔لٹل ماسٹر سچن ٹنڈولکر نے194رنز ناٹ آؤٹ بنائے۔ملتان ٹیسٹ کی پاکستان کی دوسری اننگز میں محمد یوسف کی سنچری(112رنز) اننگز کی شکست کو نہ ٹال سکی۔2005ء میں ملتان سٹیڈیم کی تاریخ کے چوتھے میچ میں پاکستان نے انگلینڈ کو 22رنز سے ہرایا۔انگلش کپتان مارکوس ٹریسکوتھک نے194 رنز کی دلکشی سنچری اننگز کھیلی۔اسی میچ میں پاکستانی اوپنر سلمان بٹ نے بھی سنچری بنائی۔2006ء میں پاکستان اور ویسٹ انڈیز کے درمیان کھیلا گیا ٹیسٹ میچ ہار جیت کے بغیر ختم ہوا۔برائن لا نے را لنچ سے پہلے سنچری بنانے کا اعزاز حاصل کیا۔پاکستان کے محمد یوسف نے 191رنز کی یادگار تھری فگر اننگز کھیلی۔ویسٹ انڈیز کے باؤلر جیروم ٹیلر نے91رنز کے عوض اور پاکستان کے دینش کنیریا نے181رنز دے کر پانچ 5وکٹیں اڑائیں۔ملتان سٹیڈیم پر 6ون ڈے انٹرنیشنل میچز بھی کھیلے جا چکے ہیں۔2003ء میں کھیلے گئے ملتان سٹیڈیم کی تاریخ کے ون ڈے انٹرنیشنل میں پاکستان نے بنگلہ دیش ک137رنز سے ہرایا۔یاسرحمید نے سنچری(116رنز)سکور کی۔2004ء میں پاکستان نے زمبابوے کو144رنز سے شکست دی۔عبدالرزاق نے بہترین سنچری(107رنز)بنائی۔ 2006ء میں بھارت نے اور ویسٹ انڈیز نے 2007ء میں جنوبی افریقہ پاکستان کے خلاف ملتان سٹیڈیم پر فتوحات اپنے نام کیں۔ویسٹ انڈیز کے سیموئلزنے ناقابل شکست سنچری(پورے 100رنز)بنائی۔2008ء میں پاکستان نے بنگلہ دیش اور زمبابوے کو ہرایا۔بنگلہ دیش کے شکیب الحسن نیسنچری(108رنز)بنائی۔2009ء میں سری لنکن ٹیم پر حملہ کے بعد پاکستان میں انٹر نیشنل کرکٹ برسوں بین رہی اور پچھلے 12برسوں کے دوران ملتان سٹیڈیم پر سٹارز کرکٹرز تو فرسٹ کلاس کرکٹ کھیلنے کیلئے ہرسال آتے رہے لیکن دنیا بھر سے انٹر نیشنل کرکٹرز اب 12 برس کے بعد ملتان سٹیڈیم پر پی ایس ایل5 کے ملتان سلطان اور پشاور زلمی کے درمیان میچ میں کھیلیں گے۔ملتان سٹیڈیم کی پچز اور سرسبز میدان تیار کرنے کا جان جوکھون والا کام انٹر نیشنل پچ کیوریٹر آغا زاہد اور محمد بشیر کاردار نے انجام دیا ہے۔

کرکٹ میچ

مزید : صفحہ اول