’افغان مفاہمتی عمل میں اسلام آباد کا کردار‘ مارچ کے آخری ہفتے میں پاکستان میں کیاہونے جارہاہے؟

’افغان مفاہمتی عمل میں اسلام آباد کا کردار‘ مارچ کے آخری ہفتے میں پاکستان ...
’افغان مفاہمتی عمل میں اسلام آباد کا کردار‘ مارچ کے آخری ہفتے میں پاکستان میں کیاہونے جارہاہے؟

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان کی جانب سے افغانستان میں قیام امن کے لئے اداکئے جانے والے کردار اور مفاہمتی عمل پرقومی سطح پر مکالمہ کرانے کا فیصلہ کیاگیاہے۔افغانستان پر خصوصی قومی مکالمہ آئندہ ماہ مارچ کے آخری ہفتے میں منعقد ہوگا۔

نجی ٹی وی اے آروائی کے مطابق افغانستان میں قیام امن کے حوالے سے پاکستان کے کردار پر بات چیت کرنے کیلئے حکومت پاکستان نے ایک قومی سطح کے مکالمے کا فیصلہ کیا ہے جس کی میزبانی قومی اسمبلی سیکرٹریٹ کرے گا۔ مکالمے میں افغانستان میں امن کی بعد کی صورتحال کا جائزہ لیا جائے گا اور قیام امن کیلئے پاکستان کے کردارپر بھی روشنی ڈالی جائے گی۔سپیکر اسمبلی اسد قیصر کا کہنا ہے کہ مکالمے میں اراکین پارلیمنٹ اور سکالرز شریک ہوں گے جو پاکستان کے افغان امن عمل میں موثرکردار کاجائزہ لیں گے۔

مکالمے کے انعقادکیلئے سپیکر اسمبلی اسد قیصر نے ہدایات جاری کردیں۔ ان کا کہنا ہے کہ افغانستان میں امن پاکستان اور خطے کے بہترین مفاد میں ہے۔

یادرہے کہ دوہزار تین سے جنگ کا شکار افغانستان میں اب تک ہزاروں افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں۔ افغانستان میں کشیدگی کے پاکستان پر براہ راست اثرات پڑے ہیں جن سے بچاو کیلئے جہاں پاکستانی حکومتوں نے اقدامات کئے ہیں وہیں پاکستان کی جانب سے اس مسئلے کو پرامن طریقے سے اور مذاکرات کے ذریعے حل کرنے کیلئے بھی بھرپور کردار اداکیاگیاہے۔

پاکستان کی کوششوں سے ہی امریکا اور افغان طالبان مذاکرات کی میز پر پہنچے ہیں اور امکان ظاہر کیاجارہا ہے کہ تین دن بعد یعنی انتیس فروری کو امریکا اور طالبان کے درمیان افغانستان میں قیام امن کا معاہدہ طے پاجائے گا۔

مزید : قومی /بین الاقوامی