کیا دورہ سری لنکا کے دوران واقعی وزیر اعظم عمران خان نے پرچی پکڑ رکھی تھی؟

کیا دورہ سری لنکا کے دوران واقعی وزیر اعظم عمران خان نے پرچی پکڑ رکھی تھی؟
کیا دورہ سری لنکا کے دوران واقعی وزیر اعظم عمران خان نے پرچی پکڑ رکھی تھی؟
سورس:   Twitter

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) وزیرا عظم عمران خان نے کچھ روز قبل سری لنکا کا دورہ کیا جہاں اپنے ہم منصب سے ملاقات کی ان کی ایک تصویر سوشل میڈیا پر یہ کہہ کر وائرل کی گئی ہے کہ انہوں نے ہاتھ میں پرچی پکڑ رکھی تھی۔

 اس حوالے سے سیکرٹری جنرل جمعیت علما پاکستان شاہ اویس نورانی  نے ٹویٹ کرکے لکھا ’ یہ نیازی نے ٹشو اس انداز میں کیوں پکڑ رکھا ہے۔ پرچی تو ظاہر ہے وہ دیکھتا نہیں اس کے ذہنی غلاموں کے مطابق۔‘

مسلم لیگ ن سے تعلق رکھنے والے آزاد کشمیر کے وزیر اطلاعات مشتاق منہاس نے وزیر اعظم کی مبینہ پرچی والی تصویر شیئر کرتے ہوئے کہا ’ میاں نواز  شریف پر تنقید کی گئی  کہ وہ امریکی صدور کے سامنے پرچی کے بغیر بات نہیں کرسکتے ، مکافات عمل دیکھیے کہ بیچارے کے ہاتھ پرچیاں دے کر سری لنکا کے حکومتی سربراہ کے سامنے بیٹھا دیا ہے۔واہ رےتبدیلی۔‘

لیگی رہنماؤں اور کارکنوں کی جانب سے وزیر اعظم عمران خان پر ’پرچی‘ کا الزام لگنے کے بعد ڈاکٹر شہباز گل نے وضاحت کی کہ وزیر اعظم کے ہاتھ میں ماسک ہے۔

اینکر پرسن طارق متین نے شاہ اویس نورانی کی جانب سے کیے گئے ٹویٹ کا جواب دیتے ہوئے کہا ’نورانی صاحب ، پی ڈی ایم کی مسلسل مہم نے بھی آپ کی ٹریننگ نہیں کی۔ یعنی جس شخص کے ہاتھ میں پرچی امریکا میں نہیں تھی وہ سری لنکا میں پرچی پکڑے گا۔ کیسے کر لیتے ہیں آپ۔‘

شاہ اویس نورانی اور مشتاق منہاس نے جو تصویر شیئر کی ہے وہ انتہائی کم کوالٹی کی ہے لیکن اگر کوئی بھی شخص اوریجنل تصویر کو دیکھے تو اس کیلئے یہ اندازہ کرنا مشکل نہیں ہوگا کہ وزیر اعظم عمران خان اور ان کے سری لنکن ہم منصب دونوں نے ہی این 95 ماسک اپنے ہاتھوں میں پکڑ رکھے ہیں۔ 

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -