نواز شریف نے الیکشن کمیشن کی تعریفوں کے پل باندھ دیئے ، ساتھ ہی ایسا مطالبہ بھی کردیا کہ حکومتی حلقوں میں تشویش پھیل جائے 

نواز شریف نے الیکشن کمیشن کی تعریفوں کے پل باندھ دیئے ، ساتھ ہی ایسا مطالبہ ...
نواز شریف نے الیکشن کمیشن کی تعریفوں کے پل باندھ دیئے ، ساتھ ہی ایسا مطالبہ بھی کردیا کہ حکومتی حلقوں میں تشویش پھیل جائے 

  

لندن(ڈیلی پاکستان آن لائن)سابق وزیراعظم اور پاکستان مسلم لیگ ن کےقائد میاں نواز شریف نےالیکشن کمیشن کی جانب سےاین اے 75  ڈسکہ کا انتخاب کالعدم قرار دینےکےفیصلےپرمسرت کا اظہار کیا ہے تاہم ساتھ ہی اُنہوں نےمطالبہ کرتےہوئےکہاہےکہ ڈسکہ میں 18 مارچ کو دوبارہ الیکشن سے زیادہ ضروری ہے کہ ضمنی الیکشن میں ووٹ چوری کرنے والے اصل کرداروں کو سامنے لاتے ہوئے سخت سزا دی جائے ،  تمام آئین شکن عناصر،ووٹ  اور  مینڈیٹ پر ڈاکہ ڈالنے عناصر  کا قلع قمع کئے بغیر ہم چین سے نہیں بیٹھیں گے۔

لندن سے اپنے مختصر ویڈیو پیغام میں نواز شریف کا کہنا تھا کہ ابھی حال ہی میں ڈسکہ میں جو انتخابات ہوئے ہیں ،الیکشن کمیشن کا ووٹ چوری کے کرداروں کی نشاندہی ،سزاؤں کا تعین اور انصاف پر مبنی فیصلہ عین قانون کی پاسداری ہے ، الیکشن کمیشن نے جرات اور بہادری کے ساتھ بکسہ چوروں کو سزائیں سنائیں ، ہمارا مطالبہ ہے کہ قوم جلد اَز جلد ان سزاؤں پر عملدرآمد ہوتا ہوا دیکھے ۔

انہوں نےکہاکہ اس بات کاسراغ لگایاجاناچاہئےکہ یہ سازش کس نے کہاں اور کب تیار کی ؟چیف سیکرٹری ، آئی جی پنجاب ،کمشنر ،آرپی او ،ڈپٹی کمشنر،ڈی ایس پی، پریذائڈنگ افسران اور دیگر سرکاری اہلکاروں کی فوج ظفر موج کو  ایک ہی صف میں کس نے کھڑا کروایا ؟بڑی حیرت کی بات ہے کہ اس با جماعت گروہ کی سرپرستی اور  ووٹ چوری کی  کس نے  نگرانی کی ؟یہ تحقیق اور یہ کام ڈسکہ میں 18 مارچ کو دوبارہ  ہونے والے  الیکشن سے بھی کہیں زیادہ ضروری ہے کہ اس کی تہہ تک پہنچا جائے ۔

سابق وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ ڈسکہ کا الیکشن بہت سارے رازوں سے پردہ اٹھاتا ہے،جس طرح یہاں چوری کی گئی ہے 2018ء کے انتخابات میں ہونے والی دھاندلی کا یہ کھلا ثبوت ہے،یہ بتاتا ہے کہ دھاندلی ایسے ہوئی تھی ،میں نے آپ کو پہلے بھی کہا ہے کہ جب الیکشن کے نتائج آنا بند ہو جائیں اور اس میں تاخیر ہونی شروع ہو جائے،بارہ، بارہ گھنٹے اور دو ، دو دن لگ جائیں جیسے 2018ءکے الیکشن میں لگے تھے تو پھر یقین کر لیں کہ آپ کا ووٹ کہیں نا کہیں چوری ہو رہا ہے اور کوئی آپ کے ووٹ کو کسی اور کے بکسے میں ڈال رہا ہے ۔انہوں نے کہا کہ ہمیں ان تمام آئین شکن عناصر تک پہنچنا ہے جو قوم کے ووٹ اور مینڈیٹ پر ڈاکہ ڈالتے ہیں ،اِن عناصر کا قلع قمع کئے بغیر ہم چین سے نہیں بیٹھیں گے ،میرا قوم کے ساتھ یہ وعدہ ہے ،اور آپ بھی اپنے دل کے ساتھ یہ وعدہ کریں کہ آپ بھی چین سے نہیں بیٹھیں گے جب تک ان ووٹ چوروں کو ملک سے ختم نہیں کردیتے۔

مزید :

قومی -