تحریک عدم اعتماد،اپوزیشن جماعتوں کو مایوسی ہوگی، زین قریشی

تحریک عدم اعتماد،اپوزیشن جماعتوں کو مایوسی ہوگی، زین قریشی

  

ملتان (نیوز   رپورٹر)وفاقی پارلیمانی سیکرٹری خزانہ مخدومزادہ زین حسین قریشی نے کہا ہے کہ اپوزیشن کی کرپشن کی داستانیں زدوعام ہیں۔ اپنی کرپشن کو بچانے کیلئے یک نکاتی ایجنڈے پر اکٹھے ہو رہے ہیں۔ ماضی کی طرح اس بار بھی اپوزیشن کو مایوسی ہوگی۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز این اے 157کی مختلف یونین کونسلوں کرپالپور فیض پور بھٹیاں جلال(بقیہ نمبر47صفحہ6پر)

 آباد کوٹ رب نواز متی تل میں مختلف تقریبات سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا جس دن سے تحریک انصاف کی حکومت اقتدار میں آئی اسی دن سے اپوزیشن نے حکومت کے خلاف سازشیں شروع کیں۔کتنی دفعہ لانگ مارچ کی تاریخیں تبدیل ہوئیں؟حکومت گرانے کیلئے اپوزیشن نے استعفوں کا ڈرامہ کیا۔ آج تک اپوزیشن کے کسی رکن پارلیمنٹ نے استعفی دیا؟ اپوزیشن جتنی مرضی تحریک چلالے جتنے مرضی لانگ مارچ کر لے۔ عدم اعتماد کی تحریک لائے حکومت کو کوئی پریشانی نہیں۔ حکومت اپنی آئینی مدت پوری کریگی۔ اپوزیشن کو ماضی کی طرح اس بار بھی ناکامی ہوگی۔ انہوں نے کہا حکومت کو عوام کے مسائل کا احساس ہے۔ حکومت کی کوشش ہے کہ عوام کو زیادہ سے زیادہ سہولیات فراہم کی جائیں۔ حکومت کی توجہ ترقیاتی منصوبوں کی تکمیل کیطرف ہے۔ اپوزیشن شور مچا کر ترقیاتی منصوبوں کی راہ میں رکاوٹ بننا چاہتی ہے۔ اپوزیشن سے دراصل ملکی ترقی ہضم نہیں ہو رہی۔ اپوزیشن کو انتظار کرنا ہوگا تحریک انصاف اپنی کارکردگی کی بنیاد پر 2023 کے انتخابات میں بھی بھر پور کامیابی حاصل کریگی۔ انہوں نے کہا این اے 157 میرا گھر ہے۔ عوام سے رابطے میں ہوں تمام توانائیاں اور وسائل حلقے کی ترقی پر خرچ کررہے ہیں۔ ماضی میں اس حلقے میں ترقیاتی منصوبے نہ دیکر حلقے کی عوام کو پسماندہ رکھا گیا۔ حلقے میں ترقیاتی کاموں کا جال بچھا رہے ہیں۔ جن کی تکمیل سے نہ صرف حلقے کی عوام کی محرومیاں دور ہونگی بلکہ حلقے کی ترقی کے ایک نئے دور کا آغاز ہوگا۔ قبل ازیں وہ  حلقے میں وفات پاجانے والی مختلف شخصیات کی رہائش گاہوں پر گئے جہاں انہوں نے مرحومین کے درجات کی بلندی کیلئے فاتحہ خوانی کی۔ قبل ازیں مختلف یونین کونسلوں کے دورہ کے دوران وہ حلقے کے مختلف وفود سے ملے جن سے حلقے میں جاری ترقیاتی منصوبوں بارے تبادلہ خیال کیا ان کے مسائل سنے اور حل کیلئے موقع پر احکامات جاری کئے۔

زین قریشی

مزید :

ملتان صفحہ آخر -