عوا م کی خدمت کر تے رہیں گے، مخالفین ترقی کے سفر میں خلل ڈالنے کی کوشش کر رہے ہیں: عثما ن بزدار

  عوا م کی خدمت کر تے رہیں گے، مخالفین ترقی کے سفر میں خلل ڈالنے کی کوشش کر ...

  

        شیخوپورہ،شرقپور،فیروزوالہ (بیورورپورٹ،نمائندہ پاکستان)وزیراعلی پنجاب سردار عثمان بزدار نے سگیاں روڈو شرقپور روڈ کی تعمیر و بحالی کے منصوبے کا سنگ بنیادرکھ دیا،ڈی جی ایل ڈی اے احمد عزیز تارڑ کی منصوبے کے بارے میں بریفنگ،منصوبے پر 4ارب 32 کروڑ روپے لاگت آئے گی،منصوبے کو 8ماہ میں مکمل کیاجائے گا، راوی پل تا پھول منڈی چوک، پھول منڈی تا فیض پور انٹرچینج، پھول منڈی چوک تا بیگم کوٹ اور پھول منڈی چوک تا لاہور شیخوپورہ روڈ تک 4سڑکوں کی تعمیر وبحالی ہوگی،منصوبے کی تکمیل سے ایک لاکھ 10ہزار سے زائد گاڑیوں کو آمد و رفت کی سہولت ملے گی،اس موقع پر ان کے ہمراہ صوبائی وزراء میاں محمود الرشید، میاں اسلم اقبال، مراد راس، میاں خالد محمود، ایم پی اے مولانا جلیل شرقپوری، ترجمان پنجاب حکومت حسان خاور، وائس چیئرمین ایل ڈی اے نعیم الحق، انسپکٹر جنرل پولیس اور ضلعی نائب صدر پی ٹی آئی حاجی ملک محمد اقبال سمیت دیگر پارٹی رہنما وجود تھے، وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے کہاکہ تاریخ کا سب سے بڑاترقیاتی بجٹ ہم نے دیا، بعض لوگ ترقی کے سفر میں خلل ڈالنے کی کوشش کر رہے ہیں،مخالفین صرف تخریب کاری کی سیاست کر رہے ہیں،ہمارے مخالفین کو صوبے کی ترقی اور عوام کی خوشحالی اچھی نہیں لگتی،ملک کی تاریخ کے سب سے بڑے ڈویلپمنٹ پروگرام کو روکنے کیلئے منفی سیاست کی جا رہی ہے،ہم منفی سیاست کرتے ہیں نہ یقین رکھتے ہیں،ہم نے ہمیشہ صاف ستھری سیاست کی ہے اور عوام کی خدمت کرتے رہیں گے،وزیراعظم عمران خان کی قیادت میں پنجاب آگے بڑھتا جائے گا،عوام کی خدمت کی ذمہ داری ہر صورت نبھائیں گے،شاہدرہ فلائی اوور پراجیکٹ کو اسی برس شروع کریں گے، گورنمنٹ ایسوسی ایٹ کالج شرق پور شریف کو اپ گریڈ،گورنمنٹ ایسوسی ایٹ کالج کو اپ گریڈ کرکے پوسٹ گریجوایٹ کالج کا درجہددیا اور گورنمنٹ ایسوسی ایٹ کالج بوائز شرق پور شریف کو مولانا شیر ربانیؒ کے نام سے منسوب کیا جائیگا، ایلیویٹڈ ایکسپریس وے منصوبہ 60 ارب روپے کی لاگت سے گلبرگ سے موٹر وے تک بنے گا،ایکسپریس وے بننے سے عوام کو آمد و رفت میں بے پناہ سہولت ملے گی،سابق حکومت نے ورثے میں لاوارث منصوبے اور 56 ارب روپے کے ڈس آنر چیک چھوڑے، سابق حکومت سے زیادہ ڈویلپمنٹ کام اب ہو رہے ہیں، تاریخ کا سب سے بڑا ترقیاتی بجٹ ہماری حکومت نے دیا ہے،ڈسٹرکٹ ڈویلپمنٹ پیکیج کے تحت 36 اضلاع میں اربوں روپے کے منصوبوں پر کام جاری ہے، لاہور پاکستان کا دل ہے اور ترقیاتی منصوبے اس شہر کا حق ہے، ہماری حکومت نے لاہور کے شہریوں کی سہولت کیلئے اربوں روپے کے منصوبے دیئے ہیں، سابق حکومت نے لاہور پر کم اور چندعلاقوں پر زیادہ خرچ کیا، آج ہر شہر اور علاقے کے ساتھ انصاف کیا جا رہا ہے،ہمارے دور میں کسی شہر یا علاقے سے ناانصافی نہ ہوئی ہے اور نہ ہوگی، عوام کو اچھی طرز حکمرانی فراہم کرنا اور سہولتیں فراہم کرنا میرا مشن ہے، ہر ضلع میں ترقی اور خوشحالی کا سفر شروع ہو چکا ہے، خود ہر ضلع میں جا کر ترقیاتی منصوبو ں پر کام کی رفتار کا جائزہ لیتا ہوں عوام کے مسائل حل کرنا ہماری ذمہ داری ہے پورے پنجاب میں جہاں جائیں گے ترقی کی آواز آئے گی،پی ٹی آئی انصاف کیلئے برسراقتدار آئی، گڈگورننس ہمارا نصب العین ہے،یونیورسل ہیلتھ کیئر پروگرام کے تحت پنجاب کے 7 ڈویژن میں قومی صحت کارڈ فنکشنل ہو چکا ہے قومی صحت کارڈ کے ذریعے ہر شہری 10 لاکھ روپے تک مفت علاج کی سہولت حاصل کر سکے گا راوی ریور اربن ڈویلپمنٹ پراجیکٹ اور سینٹرل بزنس ڈسٹرکٹ گیم چینجر منصوبے ہیں، نیا شہر آباد ہوگالاہور کو بین الاقوامی معیار کا شہر بنائیں گے سگیاں روڈ و شرق پور روڈ پراجیکٹ شروع ہو چکا ہے اس منصوبے پر 4 ارب 32 کروڑ روپے لاگت آئے گی گلبرگ تا والٹن روڈ اور کیولری گراؤنڈ سگنل فری کوریڈور پر بھی کام کر رہے ہیں لعل شہباز قلندرؒ اور گلاب دیوی انڈر پاس کے منصوبے مکمل ہو چکے ہیں جناح اور سروسز ہسپتال میں 300 بیڈ کے ایمرجنسی اور ٹراما سینٹر بنیں گے ان منصوبوں پر 12 ارب روپے سے زائد خرچ ہوں گے لاہور میں ساڑھے 9 ارب روپے کی لاگت سے واٹر میٹر لگائے جائیں گے یونیورسٹی آف چائلڈ ہیلتھ سائنسز، گنگا رام مدر اینڈ چائلڈ بلاک، ایک ہزار بیڈ کا جنرل ہسپتال بنائیں گے،داتا گنج بخشؒ فلائی اووراور شاہکام چوک فلائی اوور کے منصوبو ں پر تیزی سے کام جاری ہے بیدیاں روڈ اور کریم بلاک علامہ اقبال ٹاؤن پر انڈر پاس بنائیں گے بارش کے پانی کے بہتر استعمال کیلئے انڈر گراؤنڈ واٹر ٹینک بنائے جا رہے ہیں لاہور کی خوبصورتی اجاگر کرنے کیلئے دلکش لاہور پراجیکٹ شروع کیا ہے وکلاء ٹاور، ایم پی اے ہاسٹل فیز ٹو، ویمن ڈویلپمنٹ آفس کمپلیکس اور پریزن کمپلیکس پر بھی کام جاری ہے سول سیکرٹریٹ میں ملٹی سٹوری پارکنگ پلازہ بنایا جائیگامزار بی بی پاکدامنؒ کی تعمیر و توسیع بھی ہو رہی ہے ریونیو اکیڈمی اور ٹھوکر نیاز بیگ پر انٹرنیشنل بس ٹرمینل بھی بنائینگے، وزیراعظم کے ویژن کے مطابق لاہو رمیں پناہ گاہ اور لنگر خانے بھی قائم کئے گئے ہیں لاہور میں 60 ارب روپے کی لاگت سے بلند ترین بلڈنگ بھی بنائی جائیگی شیخوپورہ میں وارث شاہ یونیورسٹی، پنجاب جوڈیشل اکیڈمی اور کیڈٹ کالج نارنگ منڈی بنائیں گے شیخوپورہ رنگ روڈ کی تعمیر بھی شروع ہو چکی ہے بہت سے منصوبے ایکنک میں ہیں، منظور ہو گئے تو ترقیاتی بجٹ ایک ہزار ارب روپے سے بھی بڑھ جائے گا جو پنجاب کی تاریخ کا سب سے بڑا ترقیاتی بجٹ ہوگا55 فیصد ترقیاتی فنڈز استعمال کئے جا چکے ہیں متحدہ عرب امارات کے ساتھ 60 ارب روپے کے پراجیکٹ پر معاہدہ ہوا ہے یہ منصوبہ 14 برس سے رکا ہوا تھااس منصوبے سے روزگار کے نئے مواقع پیدا ہوں گے۔

عثمان بزدار

مزید :

صفحہ اول -