ڈی ایچ کیو ہسپتال کو میڈیکل  کالج کے حوالے کرنیکا حکم 

ڈی ایچ کیو ہسپتال کو میڈیکل  کالج کے حوالے کرنیکا حکم 

  

پشاور(نیوزرپورٹر)پشاورہائی کورٹ نے ہری پورمیں ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹر ہسپتال کو ایک پرائیویٹ میڈیکل کالج کے سٹوڈنٹس کے تدریسی مقاصد کیلئے حوالے کرنیکا حکم دیتے ہوئے قرار دیاہے کہ اگر مستقبل میں سرکاری میڈیکل کالج قائم کیاجاتاہے اوراس کی ضرورت اسکے لیئے پڑتی ہے تو کالج انتظامیہ اس کو واپس سرکار کو حوالہ کرنے کی پا بند ہو گی جس کے لئے اسے بیان حلفی جمع کرنے کا بھی حکم جاری کر دیا گیا،یہ احکامات عدالت عالیہ کے جسٹس لعل جان خٹک اورجسٹس فہیم ولی پر مشتمل بنچ نے ونڈسور میڈیکل کالج ہری پور کی رٹ کی سماعت مکمل ہونے پر جاری کئے.رٹ قاضی جواد احسان اللہ قریشی ایڈوکیٹ کی وساطت سے دائر کی گئی جسمیں موقف اختیار کیا گیا کہ مذکورہ کالج  پرائیویٹ سطح پر 2015 میں ہری پور میں قائم کیا گیااور کالج کے  سٹوڈنٹس کیلئے  ایک ہسپتال کی ضرورت تھی  کیونکہ پی ایم ڈی سی قانون کے تحت یہ ایک لازمی شرط ہے  اور اسی کی بنیاد پر کالج کی انتظامیہ نے صوبائی محکمہ صحت کو ایک درخواست دی کہ ہری پور کے ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال کو اس مقصد کیلئے  دیا جائے جس کیلئیتمام لوازمات پورے کئیگئے اور ہیلتھ فاونڈیشن نے اسکا باقاعدہ وزٹ کیا جسکے دوران کالج کو مکمل طورپر موزون قرار دیا گیااور کالج کی انتظامیہ نے شرائط کے تحت 30 لاکھ روپے  فیس بھی جمع کر دی اور اسکا باقاعدہ معاہدہ طے پایا  جسکا باقاعدہ ثبوت فائل پر موجودہے۔قاضی جواد نے مزید کہا کہ اسکے بعد فاونڈیشن نے پاکستان میڈیکل کونسل کو آگاہ کرتے ہوئے  کالج کو ہر لخاظ سے درست قرار دیا مگر ایک مرتبہ پھر ہیلتھ فاونڈیشن کے بورڈ اف گورنرز نے موقف اختیار کیا کہ اس کی بڈنگ ہو گی اسمیں بھی وہ سب سیبڑی دینے کیبعد کامیاب قرار پائے مگر ان کے باوجود ابھی ہسپتال کو حوالہ نہیں کیا جارہا جو کہ ایک غیر قانونی عمل ہے  اب یہ شرط عائد کی گئی ہے کہ اگر آئندہ 5 سال میں کوئی سرکاری  میڈیکل کالج نہیں بن رہا تو تب وہ اسکی حوالگی کرنے کیلئے تیار ہیں بصورت دیگر نہیں۔خالانکہ معاہدے کی رو سے اگر کوئی سرکاری کالج بنتاہے تو ایک سال کے اندر اس کو واپس سرکار کی تحویل میں دیاجائیگا  اسی بنیاد پر یہ موقف سمجھ سیبالاتر ہے دوسری جانب حکومت اورہیلتھ فاونڈیشن کیوکلاء نے بتایا کہ ایک غیر ملکی تنظیم اس میں کام کی خواہشمند ہے اور ہوسکتاہے اس کواپ گریڈ کیا جائے  اس لئے اسکو پرائیویٹ کالج کو نہیں دیا جا سکتا.عدالت نے تمام دلائل مکمل ہونے پر  ہسپتال مشروط طورپر  مزکورہ میڈیکل کالج کو حوالے کرنے کا حکم جاری کر دیا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -