پیٹ کی گیس کا سب سے بڑا ذریعہ انتہائی معمولی عادت

پیٹ کی گیس کا سب سے بڑا ذریعہ انتہائی معمولی عادت
پیٹ کی گیس کا سب سے بڑا ذریعہ انتہائی معمولی عادت

برمنگھم (نیوز ڈیسک) پیٹ کی گیس، کھانے کے بعد پیٹ پھولا ہوا محسوس ہونا، جسے حرف عام میں اپھارہ بھی کہا جاتا ہے۔ آج کل عام پایا جانے والا مسئلہ ہے۔ اکثر لوگ یہ سمجھتے ہیں کہ اس کی وجہ گندم کی روٹی یا زیادہ مقدار میں کھانا ہے لیکن اصل میں اس کی وجہ یہ نہیں کہ آپ کیا کھاتے ہیں اور کتنا کھاتے ہیں، بلکہ اس کی اہم ترین وجہ یہ ہے کہ آپ کھانے میں بہت جلد بازی سے کام لیتے ہیں اور لقمے پر لقمہ ڈالتے چلے جاتے ہیں۔ جدید دور میں مصروف طرز زندگی کی وجہ سے لوگ کام کے دوران ہی جلدی جلدی کھانا کھانے کی کوشش کرتے ہیں اور بعض تو محض دو چار منٹ میں ہی کھانا ختم کرلیتے ہیں۔

بلاوجہ تھکاوٹ کی اہم وجوہات سامنے آگئیں،جاننے کیلئے کلک کریں

مشہور برطانوی ماہر غذائیت جین کلارک کہتی ہیں کہ جب آپ تیزی سے کھانا کھاتے ہیں تو زیادہ مقدار میں ہوا خوراک کی نالی میں چلی جاتی ہے اور جلد کھانا نگلنے کی کوشش میں کھانے کے بڑے بڑے لقمے نظام انہظام میں رکے رہتے ہیں جس کا لازمی نتیجہ گیس اور پیٹ پھولنے کی صورت میں نکلتا ہے۔ اگر آپ کو یہ مسئلہ درپیش ہے تو حل بڑا سادہ ہے۔ کام کے دوران کھانے کی باقاعدہ بریک لیں جو کم از کم 20 منٹ کی ہو۔ کھانا آہستہ آہستہ چبا کر تقریباً 15 منٹ میں کھائیں اور اس کے بعد تقریباً 5 منٹ کیلئے سکون سے بیٹھیں یعنی آرام فرمائیں اور اس کے بعد ہی کام پر لوٹیں۔ یہ طریقہ کار اپنانے سے آپ گیس، پیٹ کی سختی اور اپھارے سے محفوظ رہیں گے۔

مزید : تعلیم و صحت

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...