رفیوجیوں کومستقل باشندہ بنانا ایک سازش ہے :یاسین ملک

رفیوجیوں کومستقل باشندہ بنانا ایک سازش ہے :یاسین ملک

 سرینگر(کے پی آئی)جموں وکشمیر لبریشن فرنٹ چیئرمین محمد یاسین ملک نے کہا ہے کہ 26 جنوری کو بھارت جمہوریت کے دن کے طور پر مناتا ہی۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ جمہوریت کا مطلب و منشا یہ ہوا کرتا ہے کہ لوگوں کی خواہشات کا احترام کیا جائے اور انہیں ان کی مرضی کے مطابق اپنے مستقبل کا فیصلہ کرنے کی آزادی دی جائے لیکن حق یہی ہے کہ بھارت اپنے تمام تر جمہوری دعوؤں کے باوصف پچھلی چھ دہایؤں سے کشمیریوں کے جمہوری حق پر شب خون ماررہا ہی۔فرنٹ چیئرمین نے کہا ہے کہ جموں کشمیر کے سلسلے میں بھارت کا یہ جمہوریت کش رویہ آج بھی جاری ہے لہذا کشمیری اس ملک کے یوم جمہوریہ کو بطور یوم احتجاج ہی مناسکتے ہیں۔ یاسین ملک نے کہا کہ جموں کشمیر کے لوگ اس برس بھی6 جنوری کو اپنے کاروبار،ٹرانسپورٹ اور دوسری سرگرمیوں کو معطل رکھتے ہوئے مکمل احتجاجی ہڑتال کریں گے اور دنیا پر واضح کردیں گے کہ کشمیری جبر کے باوجود اپنے حق آزادی کیلئے برسر جدوجہد ہیں۔ مغربی پاکستان کے رفیوجیوں کو جموں کشمیر کا مستقل باشندہ بنانے کو ایک سازش قراردیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کشمیری عوام جموں کشمیر کو حاصل خصوصی درجے کے دفاع ،اسکے مسلم اکثریتی شناخت کی حفاظت نیز اس سرزمین کی ماحولیات کو بچانے کیلئے اپنی جان تک کی بازی لگانے سے گریز نہیں کریں گی۔ انہوں نے کہا کہ بھارتی حکمرانوں کو یہ بات ذہن نشین کرلینی چاہئے کہ کشمیری ایسے سازشی منصوبوں کی راہ میں آہنی دیوار بن کر کھڑے ہوں گے اور کسی بھی صورت میں جموں کشمیر میں آبادی کے تناسب کو بدلنے نیز اس ریاست کے تاریخی مسلم اکثریتی کردار کو مسخ کرنے کی کسی کو بھی اجازت نہیں دی جائے گی۔انہوں نے کہا کہ اگر بھارتی لیڈران، انکی جماعتوں اور انکی پارلیمنٹ و مذکورہ وزرا کو ان رفیوجیوں کا انتا ہی خیال ہے تو انہیں بھارتی شہری قبول کرکے بھارت کے شہروں پنجاب، ہریانہ، یو پی وغیرہ میں آباد کرنے کیلئے اقدامات اٹھانے چاہئیں۔یہ لوگ کسی بھی صورت میں جموں کشمیر کے باشندے نہیں ہیں اور کبھی بھی جموں کشمیر کے مستقل باشندے نہیں بن سکتی۔

مزید : عالمی منظر