پٹرولیم بحران پچاس سالہ تاریخ میں سب سے بدترین بحران تھا ،کامران سیف

پٹرولیم بحران پچاس سالہ تاریخ میں سب سے بدترین بحران تھا ،کامران سیف

لاہور(خبر نگار)مسلم لیگ ق کے راہنما وجوائنٹ سیکرٹری لاہور میاں کامران سیف نے کہا ہے کہ بجلی کی بدترین لوڈشیڈنگ ،گیس کا بحران اور پٹرولیم بحران کے بعد بدترین حالات کے باعث عوام اب( ق) لیگ کے دور کو یاد کرتے ہیں انہوں نے وفاقی وزیر پٹرولیم شاہد خاقان عباسی کے اس بیان کو عوام کی توہین قرار دیا کہ\" پٹرول کی قلت کے ذمہ دار عوام، میڈیا اور بوتلوں میں مانگنے والے بھکاری ہیں\" پٹرولیم بحران پچھلے پچاس سالہ تاریخ میں سب سے بدترین بحران تھا جس میں وفاقی وزیر کی نااہلی کے باعث پوری قوم کو پریشانی کا سامنا کرنا پڑا موصوف ذمہ داری قبول کرکے مستعفی ہونے کی بجائے بڑی ڈھٹائی سے عوام ،میڈیا پر بہتان تراشی کررہے ہیں۔ نااہل وزیر پٹرول بحران کے دوران صرف اور صرف بیان بازی کرتے رہے کسی ایک دن بھی عوام میں نہیں گئے ورنہ عوام انہیں بھیگی بلی بنا دیتے ۔ میاں کامران سیف نے کہا کہ پٹرولیم بحران یک ذمہ داران بیان بازی کی بجائے اپنی وزارتوں سے مستعفی ہوں اور عوام کی جان چھوڑیں۔ کیونکہ نااہل وزراء نے ملک کا بیڑا غرق کردیا ہے یہ قومی خزانے پر بوجھ ہیں۔

ا

نہوں نے کہا کہ چوہدری پرویز الہٰی کے دور کا آج کے دور سے موازنہ کیا جائے تو عوام کو موجودہ حکومت کی حقیقت کا پتہ چل جائے گا۔کیونکہ چوہدری پرویزالہٰی کا دور خوشحالی کا دور تھا جبکہ آج کا دور بحرانوں اور بدحالی کا دور ہے چوہدری پرویز الہٰی دور میں لوگوں کو تمام سہولیات میسر تھیں جبکہ آج کے دور میں عوام سے سہولیات چھینی جارہی ہیں ۔موجودہ حکومت نے عوام کو بنیادی سہولیات کی فراہمی کیلئے کوئی انقلابی قدم نہیں اٹھایا صرف بیان بازی پر زور ہے ۔انہوں نے کہا کہ چوہدری پرویز الہٰی محب وطن سیاستدان ہیں ان کی قیادت میں ہی ملک کو بحرانوں سے نجات دلائی جاسکتی ہے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1