جمعیت علماء اسلام (س) کا گستاخانہ خاکوں کی اشاعت کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

جمعیت علماء اسلام (س) کا گستاخانہ خاکوں کی اشاعت کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

 لاہور (پ ر) جمعیت علماء اسلام (س) لاہور کے زیر اہتمام امریکی اور یورپی حمایت یافتہ گستاخانہ خاکوں کی اشاعت کیخلاف’’ مولانا عبدالروف فاروقی اور مولانا عبدالرب امجد کی قیادت میں شملہ پہاڑی لاہور پریس کلب میں ایک احتجاج مظاہرہ کیا گیا اس موقع پر پلے کارڈز ، بینرز اور گنبد خضریٰ کی تصاویر اٹھائے مظاہرین نے نبی کریم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کے گستاخوں کیخلاف نعرے بازی کی اور محبت رسول کا اظہار کرتے ہوئے’’ غلام ہیں غلام ہیں رسول کے غلام ہیں‘‘ کے نعرے لگائے مقررین نے فرانس سے سفارتی تعلقات ختم کر کے اس کے سفیر فی الفور ملک بد رکیا جا ئے اور ان کی مصنوعات کا مسلمان بائیکاٹ کریں او آئی سی کا ہنگامی اجلاس طلب کر کے مشترکہ لائحہ دیا جا ئے اور ایسی ہر سازش سے نمٹنے کا طریق کار طے کیا جا ئے مولانا عبدالروف فاروقی اور مولانا عبدالرب امجد نے اپنے خطاب میں کہا کہ پاکستان اسلام کے نام پر قائم ہونیوالا واحد نظریاتی ملک ہے انبیاء خصوصاحضور خاتم النبینؐ کی شان میں گستاخی کو اظہار رائے کی آزادی کا نام دے کر بے ادبی اور گستاخی کی اجازت نہیں دی جا سکتی ہے ہر نبی ؐقابل احترام ہیں مسلمان کسی بھی نبی ؐکی شان میں گستاخی کا تصور بھی نہیں کر سکتا۔  اور نہ ہی اس برداشت کر سکتا ہے فرانس کی اخبار کی جانب سے خاکے بڑی تعداد میں چھاپنے کا اعلان امت مسلمہ کے لئے بڑا چیلنج ہے مسلمان ہر بات کو برداشت کر سکتا ہے لیکن کسی بھی نبی خصو صا پیغمبر انقلاب ؐ کی شان میں گستاخی بر داشت نہیں کر سکتے ہیں۔قاری اعظم حسین،قاری واحد بخش سمیت دیگرنے کہا کہ صدر اور وزیر اعظم گستا کانہ خاکوں کیخلاف ملک گیر مظاہروں کا اعلان کریں اور خود ان کی قیادت کریں پا کستان کا ہر شہری ان مظاہروں میں شریک ہو گا ناموس رسالتؐ کے قانون کیخلاف سازشیں عروج پر ہیں لیکن ایسی کسی سازش کو کامیاب نہیں ہو نے دیں گے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 4