موجودہ صدی اردو ادب میں مجید امجد کی ہے ، شیراز لطیف

موجودہ صدی اردو ادب میں مجید امجد کی ہے ، شیراز لطیف

 لاہور (پ ر) چےئرمین اکادمی ادبیات پاکستان شیراز لطیف نے کہا ہے کہ موجودہ صدی اردو ادب میں مجید امجد کی صدی ہے مجید امجد نے اردو شاعری بالخصوص نظم کے وقار کو بلند کیا اور اس میں نئے رجحانات کو متعارف کرایا ان خیالات کا اظہار انہوں نے مجید امجد کے صدسالہ یوم پیدائش کے حوالے سے منعقدہ سیمینار سے خطاب کے دوران کیااس سیمینار کا اہتمام مجید امجد اکیڈمی ساہیوال اور مہکاں پنجابی ادبی بورڈ ساہیوال کے تعاون سے ضلع کونسل ہال ساہیوال میں کیا گیانامور سکالر اور نقاد ڈاکٹر سعادت سعید نے سینمار کی صدارت کی   انہوں نے کہا کہ مرکزی شہروں سے ہٹ کر دوسرے شہروں کہ شاعروں کو متعارف کروانے اور ان کی شاعری کے فروغ کیلئے اکادمی ادبیات پاکستان کا کردار بہت اہم ہے پاکستان میں اردو ادب اور شاعری کے فروغ کیلئے اس ادارے کے کردار کی خدمات سے انحراف ممکن نہیں۔   مجید امجد نے اپنے فن کے ذریعے شاعری کے وقار کو بلند کیا دوسرے مقررین نے جن میں ماہر نقاد ڈاکڑناصر عباس نیر اور مجید امجد اکیڈمی کے بانی صدر غلام فرید کاٹھیا شامل تھے نے مجید امجد کی شاعری اور شخصیت پر بھرپور مقالے پڑھے۔  مقررین نے کہا کہ آج کے دور میں ان کی شاعری سے بھرپور استفادہ کیا جا سکتا ہے خصوصاً نوجوان نسل ان کی شاعری سے بہت کچھ سیکھ سکتی ہے۔ساہیوال اور دیگر علاقوں کے اہل قلم کی بڑی تعداد نے سیمینار میں شرکت کی۔

مزید : میٹروپولیٹن 4