ننکانہ :چھیڑ خانی سے منع کرنے پر بااثرافراد کا طالبہ پر تشدد

ننکانہ :چھیڑ خانی سے منع کرنے پر بااثرافراد کا طالبہ پر تشدد

 ننکانہ صاحب (ڈسٹرکٹ رپورٹر، نمائندہ خصوصی) چھیڑ خانی سے منع کرنے پر با اثر افراد کا گھر میں داخل ہو کر تھرڈ ائیر کی ہونہار طالبہ پر بد ترین تشدد ، بالوں سے پکڑ کر سڑک پر گھسیٹے رہے ، بازو ناکارہ کر دیا ، طالبہ کا انصاف نہ ملنے پر وزیر اعلیٰ ہاؤس کے سامنے خود سوزی کی دھمکی، مقدمہ درج ، پولیس بااثر ملزما کو گرفتار کرنے سے گریزاں تفصیلات کے مطابق تھانہ واربرٹن کے علاقہ محلہ عید گاہ کی رہائشی تھرڈ ائیر کی ہونہار طالبہ ماہ رخ کو علاقہ کے با اثر اوباش ملزمان شاہ زیب وغیر ہ نے چھیڑ خانی سے منع کرنے کی رنجش پر اپنی ساتھی خاتون بلقیس بی بیوغیرہ کے ہمراہ ماہ رخ کے گھر پر دھاوا بول دیا اور اسے بالوں سے پکڑ کر گھسیٹے ہوئے سڑک پر لے آئے ملزمان نے سرعام ماہ رخ کوبدترین تشدد کا نشانہ بنایا جس سے اسکا بازو ناکارہ ہو گیا اور ملزمان زخمی طالبہ کو سڑک پر لٹا کر بڑھکیں مارتے رہے پولیس تھانہ واربرٹن ما ہ رخ کے والد منظور احمد کی درخواست پر مقدمہ دج کر لیا ہے تاہم کوئی بھی ملزم گرفتار کرنے سے گریزان ہے طالبہ نے صحافیوں سے باتیں کرتے ہوئے کہا کہ میں عدم تحفظ کے باعث مزید تعلیم جاری نہیں رکھنا چاہتی اگر مجھے انصاف نہ ملا تو میں وزیر اعلیٰ ہاؤس کے سامنے خود سوزی کر لوں گی ۔ اس بابت ایس ایچ او تھانہ واربرٹن وجیہ الحسن نے کہا کہ مقدمہ درج کر لیا ہے جلد ملزمان کی گرفتاری کے لیے چھاپہ ماریں گے۔

مزید : علاقائی