ضلع اوکاڑہ کی 28 لاکھ کی آبادی کے لئے 18 پولیس تھانے کم پڑھ گئے

ضلع اوکاڑہ کی 28 لاکھ کی آبادی کے لئے 18 پولیس تھانے کم پڑھ گئے

 اوکاڑہ(بیورورپورٹ)اوکاڑہ ضلع کی28لاکھ کی آبادی کے لئے 18پولیس تھانے کم پڑ گئے۔ڈی پی او اوکاڑہ نے 11پولیس چوکیوں میں سے پانچ کو تھانوں کا درجہ دینے کی سفارش کر دی۔تھانہ شیرگڑھ کی عمارت کی تعمیر نو کے لئے بھی منصوبہ تیار۔ڈی پی او نے ضلع کی تاریخ میں پہلی مرتبہ ایک پولیس آفیسر کو انسپکٹر ڈویلپمنٹ کی سیٹ پر تعینات کر دیا۔تفصیلات کے مطابق اوکاڑہ ضلع کی آبادی اس وقت کم وبیش28لاکھ ہے۔جسکے جان و مال کے تحفظ کے لئے ضلع میں پولیس کے چار سرکل،18تھانے اور 11پولیس چوکیاں ہیں جن میں پولیس کی نفری اسقدر کم ہے کہ دن رات گشت کرنے کے لئے بھی پولیس ملازمین میسر نہیں ۔ایک پولیس تھانہ کئی کئی کلو میٹر رقبے پر محیط ہے۔سنگین واردات ہو جانے کی صورت میں ایک طرف دور دراز تھانے سے پولیس کے جائے واردات تک پہنچنے میں دیر لگتی ہے تو دوسری طرف دو تھانوں میں حدود کا تعین بھی قانونی کارروائی میں تاخیر کا سبب بن جاتا ہے۔اوکاڑہ میں نئے تعینات ہونے والے ڈی پی او کیپٹن (ر) محمد فیصل رانا نے چارج سنبھالنے کے بعد جہاں پر کرائم کے دیگر عوامل کو ٹریس کیا وہاں پر ایک پروفیشنل پولیس آفیسر کی حیثیت سے یہ سروے بھی کروایا کہ ضلع میں کرائم کو زیادہ سے زیادہ کنٹرول کرنے کے لئے اور کیا اقدامات ضروری ہیں۔ڈی پی او نے اس حوالے سے انسپکٹر ملک تصور کو انسپکٹر ڈویلپمنٹ کی سیٹ پر تعینات کیا جو اوکاڑہ ضلع کی تاریخ میں بننے والی پہلی پوسٹ ہے۔ڈی پی او فیصل رانا نے ایک کمپری ہینسو سروے کے بعد اعلیٰ حکام کو آگاہی کا لیٹر لکھا کہ ضلع کی آبادی کے حوالے سے اوکاڑہ ضلع میں پہلے سے موجود11پولیس چوکیوں میں سے پانچ کو تھانوں کا درجہ دے دیا جائے۔ڈی پی او کی جانب سے یہ بھی سفارش کی گئی کہ تھانہ شیر گڑھ کی عمارت کی از سر نو تعمیر کے لئے بھی اقدامات اٹھائے جائیں۔ایک ملاقات میں ڈی پی او فیصل رانا نے بتایا کہ کرائم کی روک تھام کے لئے جہاں پر پولیس نفری کی کمی کو پورا کرنے کی کوشش کی جارہی ہے وہاں پر پانچ پولیس چوکیوں کو اپ گریڈ کر کے تھانوں کا درجہ دینے کے حوالے سے بھی کوششیں کی جا رہی ہیں۔انہوں نے بتایا کہ جیسے ہی حکومت کی جانب سے نئے تھانوں کی منظوری ہو جائے گی۔ان کی عمارتوں کی تعمیر کے لئے تیزی کے ساتھ کام شروع کروا دیا جائے گا۔کیوں کہ نئے تھانوں کی منظوری کے ساتھ ہی انکی تعمیر کے لئے فنڈز بھی جاری ہو جائیں گے۔ ڈی پی او نے بتایا کہ نئے تھانوں کی تعمیر سے نیا پولیس سرکل بھی بنے گا ۔نئے تھانوں کی ہیئت دیکھ کر پولیس سرکلز میں ایک سے زائد سرکل کا اضافہ بھی ہو سکتا ہے۔

مزید : علاقائی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...