نیشنل ایکشن پروگرام کے تحت آپریشن کلین اپ 127 ملزمان گرفتار

نیشنل ایکشن پروگرام کے تحت آپریشن کلین اپ 127 ملزمان گرفتار

 لاہور(کرائم سیل) نیشنل ایکشن پروگرام کے تحت شہر میں لاؤڈ سپیکر کے غیر قانونی استعمال ، مذہبی منافرت پھیلانے والے لیٹریچر، سی ڈیز فروخت کرنے اور وال چاکنگ کرنے والوں کے خلاف سی سی پی او لاہور کیپٹن (ر) امین وینس کی ہدایت پرشہر بھر میں جاری آپریشن کلین اپ کے دوران اب تک لاؤڈ سپیکرز ایکٹ کی خلاف ورزی ، مذہبی منافرت پھیلانے کے لٹریچر، سی ڈیز فروخت کرنے اور وال چاکنگ کرنے والوں کے خلاف 512مقدمات درج کر کے 127ملزمان کو گرفتار کیا گیا اور ان سے 137 سے زائدلاؤڈسپیکرو ایمپلی فائر ، مذہبی منافرت اور اشتعال انگیز تقاریر پر مبنی سینکڑوں کتابیں،رسالے، پمفلٹ اور سی ڈیز قبضہ میں لی گئیں۔ڈی آئی جی آپریشنز ڈاکٹر حیدر اشرف نے آپریشنز کلین اپ کے حوالے سے بتایا کہ لاؤڈ سپیکر ایکٹ کی خلاف ورزی اور لاؤڈ سپیکر پر اشتعال انگیز تقاریر کرنے والوں کے خلاف فوری قانونی کاروائی کی جائے گی جبکہ مذہبی منافرت پھیلانے والے لٹریجر اور سی ڈیز فروخت کرنے والوں سے بھی آہنی ہاتھوں سے نمٹا جائے گا۔ اُنہوں نے اشتعال انگیز نعروں اور مذہبی منافرت والے جملوں پر مبنی وال چاکنگ کے ساتھ ساتھ فحش سی ڈیز اور لٹریچر فروخت کرنے والوں کے خلاف بھی فوری قانونی کاروائی کا حکم دیا ہے۔ اُنہوں نے مزیدکہا کہ اشتعال انگیز مذہبی تقاریر معاشرے میں تصادم اور بگاڑ کا سبب بنتی ہیں جس کی روک تھام کے لیے قانون کی بالا دستی کو ہر صورت یقینی بنایا جائے گا۔ڈی آئی جی آپریشنز نے کہا کہ تمام مساجد اور امام بارگاہوں کے منتظمین اور خطیب حضرات سے اس بات کی گارنٹی لی جائے گی کہ نہ تو ان کی مساجد اور امام بارگاہوں سے کوئی فتنہ فساد پر مبنی تقریر کرے گا اور نہ ہی لاؤڈ سپیکر کا غیر قانونی استعمال کیا جائے گا۔اُنہوں نے کہا کہ موجودہ نازک صورتحال میں ہم سب کو ملک کے استحکام کے لیے اپنا اپنا کردار ادا کرنا ہو گا اور ذمہ داری کا مظاہرہ کرتے ہوئے ہر اس عمل سے گریز کرنا ہو گا جو آپس میں نااتفاقی اور انتشار کا سبب بنے۔

مزید : علاقائی