مسجد میں زیادتی و قتل ، گرفتارملزم پر پولیس کی فائرنگ، جانبرنہ ہوسکا

مسجد میں زیادتی و قتل ، گرفتارملزم پر پولیس کی فائرنگ، جانبرنہ ہوسکا

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) گرین ٹاﺅن کی مسجد میں جنسی زیادتی کے بعد بچہ قتل کرنیوالا ملزم مبینہ پولیس مقابلے میں ماراگیاہے جس کی تحقیقات کے لیے انکوائری کمیٹی تشکیل دی جارہی ہے ۔

پولیس کے مطابق ملزم کو عدالت میں پیشی کے لیے لے جایاجارہاتھاکہ راستے میں مسلم ٹاﺅن کے قریب ملزم نے پولیس اہلکار منورسے پستول چھیننے کی کوشش کی جس دوران ہاتھاپائی ہوئی اورجوابی کارروائی میں گولی چلنے سے ملزم شدید زخمی ہوگیا ، ملزم معین کو ہسپتال منتقل کیاجارہاتھاکہ اس دوران زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسا۔

یادرہے کہ دسمبرمیں گرین ٹاﺅن کے علاقے میں ایک مسجد سے بچے کی لٹکی ہوئی لاش ملی تھی اور میڈیکل رپورٹ میں زیادتی ثابت ہوگئی تھی ، کئی دیگرافراد سمیت پولیس نے ملزم معین اوراس کے ساتھی طاہرثاقب کو بھی گرفتارکیاتھا، دوران تفتیش ملزم معین نے جنسی زیادتی اورقتل کا اعتراف بھی کرلیاتھا۔

ہسپتال ذرائع کے مطابق ملزم کے دل میں گولی لگی جو پار ہوگئی جس سے موت واقع ہوگئی ۔

پولیس کے ہاتھوں قتل ہونیوالے معین کے لواحقین نے الزام عائد کیاہے کہ پولیس نے گاڑی روک کراُسے بھاگنے کی ہدایت کی اور پھر گولیاں ماردیں ، قانون اپنے ہاتھ میں لینے والے اہلکاروں کے خلاف کارروائی کی جائے اور انصاف دلایاجائے ۔

مزید : جرم و انصاف

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...