آکسیجن شاٹس انسانی صحت کے لئے مضر ہیں ،لاہور ہائی کورٹ کے ریمارکس

آکسیجن شاٹس انسانی صحت کے لئے مضر ہیں ،لاہور ہائی کورٹ کے ریمارکس
آکسیجن شاٹس انسانی صحت کے لئے مضر ہیں ،لاہور ہائی کورٹ کے ریمارکس
لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے قرار دیا ہے کہ بادی النظر میں آکسیجن شاٹس انسانی صحت کے لئے مضر ہیں، کسی کو انسانی جانوں سے کھیلنے کی اجازت نہیں دی جا سکتی۔مسٹر جسٹس فرخ عرفان خان نے آکسیجن شاٹس دینے والے بلیو لگان کیفے کی بندش کے خلاف درخواست پر سماعت کی، سٹی ڈسٹرکٹ گورنمنٹ کے سینئر لیگل ایڈوائزر میاں افتخار احمد نے عدالت میں رپورٹ جمع کراتے ہوئے کہا گلبرگ میں واقع آکسیجن شاٹس دینے والے کیفے کو اس لئے سربمہر کیا گیا کیونکہ اس گھناﺅنے کاروبار کی وجہ سے نوجوان نسل تباہ ہو رہی ہے، انہوں نے موقف اختیار کیا کہ آکسیجن شاٹس پھیپھڑوں کے لئے انتہائی مضر ہیں اور قانون کے مطابق کسی کو بھی مضر صحت کاروبار کرنے کی اجازت نہیں دی جا سکتی، میاں افتخار نے مزید بتایا کہ ضلعی انتظامیہ شیشہ کیفوں اور آکسیجن شاٹس دینے والے کیفوں کے خلاف سخت کارروائی کر رہی ہے.
جس پر عدالت نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ اس بات میں کوئی شک نہیں کہ آکسیجن شاٹس انسانی صحت کے لئے مضر ہیںجن ممالک میں یہ متعارف ہوئے تھے ان ممالک نے بھی ازخود ہی اس پر قابو پالیا، پاکستان میں بھی کسی کو انسانی جانوں کے ساتھ کھیلنے کی اجازت نہیں دی جا سکتی، عدالت نے کنسلٹنٹ انسداد منشیات سید ذوالفقار کی اس معاملے میں فریق بننے کی درخواست منظور کرتے ہوئے کیفے مالکان کو ہدایت کی کہ وہ 28جنوری تک اپنا حتمی موقف عدالت میں پیش کریں۔

مزید : لاہور

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...