وزیر اعلٰی ٹاسک فورس کے چھاپے ،ہسپتالوں سے چوری ہونیوالی ادویات برآمد

وزیر اعلٰی ٹاسک فورس کے چھاپے ،ہسپتالوں سے چوری ہونیوالی ادویات برآمد

  

لاہور(جاوید اقبال)صوبائی دارالحکومت کے ہسپتالوں میں سرکاری ادویات کی چوری کا دھندہ نہ رک سکا گزشتہ روز وزیر اعلیٰ ٹاسک فورس برائے انسداد جعلی ادویات نے شہر کے مختلف علاقوں میں کامیاب چھاپے مار کر سرکاری ہسپتالوں سے چوری شدہ ادویات کے بڑے ذخائر پکڑ لیے ۔چھاپے گلبرگ اور ٹھوکر نیاز بیگ کے علاقوں میں مارے گئے اس دوران لاہور جنرل ہسپتال اور سوشل سیکیورٹی کے کئی ہسپتالوں سے چوری شدہ لاکھوں روپے مالیت کی مہنگی ترین ادویات برآمد کر لی گئیں ۔چھاپوں کی قیادت ٹاسک فورس کے ڈویژنل سربراہ اور صوبائی پارلیمانی سیکرٹری برائے صحت خواجہ عمران نذیر نے کی جبکہ ڈپٹی ڈرگ کنٹرولر شوکت وہاب کے علاوہ مختلف ڈرگ کنٹرولر عمران سرفراز ،امامہ حسین ،فیصل شہزاد ،سکندر بابر ،رانا متین بھی شامل تھے ۔ٹاسک فورس کو اطلاع ملی تھی کہ شہر کے مختلف علاقوں میں سرکاری ہسپتالوں سے چوری شدہ سرکاری ادویات کی خرید و فروخت ہورہی ہے جس پر ٹیم نے گزشتہ روز ٹھوکر ،گلبرگ ،کھاڑک ،ملتان روڈ سیون اپ پھاٹک کے میڈیکل سٹوروں پر چھاپے مارے اس دوران ان سٹوروں سے بڑی تعداد میں جنرل ہسپتال اور سوشل سیکیورٹی کے ہسپتالوں سے چوری شدہ ادویات کی بڑی مقدار برآمد کر لی گئی ۔برآمد ہونے والی سرکاری ادویات میں کینسر کے علاج معالجہ میں استعمال ہونے والی مہنگی ترین ادویات کیموتھراپی میں استعمال ہونے والے انجکشن ،اینٹی بائیوٹیک ادویات ،اینٹی الرجی ،گردوں کے ڈائلسز میں استعمال ہونے والی ادویات اور انجکشن برآمد کر لیے گئے ۔ان ادویات پر ناٹ فار سیل کی مہریں بھی لگی ہوئی تھیں ٹیم نے ادویات قبضے میں لیکر سٹوروں اور فارمیسیوں کو سیل کر دیا جبکہ دو گودام بھی سیل کیے گئے جبکہ سٹوروں کے مالکان کے خلاف مقامی تھانوں میں مقدمات بھی درج کروا دیئے گئے اس دوران سرکاری ادویات کی چوری کرنے والے 4افراد کو بھی گرفتار کروا دیا گیا ۔اس حوالے سے ٹاسک فورس کے سربراہ خواجہ عمران نذیر نے پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ سرکاری ہسپتالوں سے چوری ہونے والی ادویات کا دھندہ وزیر اعلیٰ کے نوٹس میں لایا جائے گا ۔سرکاری ہسپتالوں سے سرکاری ادویات کا پرائیویٹ میڈیکل سٹوروں پر فروخت ہونا قابل افسوس امر ہے پہلے بھی سروسز ہسپتال ،گنگارام اور جناح ہسپتال سمیت دیگر ہسپتالوں سے چوری شدہ ادویات لوہاری اور انارکلی سے پکڑی تھیں مگر ان ہسپتالوں کی انتظامیہ صحت جرم سے مکر گئی سرکاری ادویات کی چوری کا دھندہ انتظامیہ کی ملی بھگت کے بغیر ممکن نہیں ہے اس کا سخت ایکشن ہوگا ۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -