آرمی چیف کے فیصلے سے فوج سمیت تمام ادارے مضبوط ہوں گے ،سیاسی و تاجر رہنما عسکری ماہرین

آرمی چیف کے فیصلے سے فوج سمیت تمام ادارے مضبوط ہوں گے ،سیاسی و تاجر رہنما ...

  

لاہور(جاوید اقبال،محمد نواز سنگرا ،اسد اقبال) آرمی چیف کا مد ت ملازمت میں توسیع نہ لینے کافیصلہ قابل فخر ہے جو فوج سمیت باقی اداروں کی مضبوطی کیلئے ایک اہم قدم ثابت ہوگا، آرمی چیف کی ریٹائرمنٹ میں ایک سال کا عرصہ پڑا ہے،فوج میں قابلیت کی کمی نہیں ،نئے آرمی چیف سے بھی اچھی توقعات رکھنی چاہئیں۔ عوامی نیشنل پارٹی کے رہنما غلام احمد بلور نے کہا کہ آرمی چیف جنرل راحیل شریف نئے آنے والے آرمی چیف کیلئے ایک رول ماڈل ہوں گے۔مدت ملازمت میں توسیع لینا یا نہ لینا ان کا ذاتی فیصلہ ہے ۔پیپلز پارٹی کے رہنما نذر محمد گوندل نے کہا کہ جنرل راحیل شریف نے دہشتگردی کے خاتمے کیلئے اہم کام کیے ہیں جنہیں قوم کو سراہنا چاہیے۔وہ اچھی روایات ڈال کر جا رہے ہیں ۔جنرل (ر)راحت لطیف نے کہا ہے کہ جنرل راحیل شریف کی مدت ملازمت ابھی ایک سال باقی ہے۔فوج ایک منظم ادارہ ہے جس میں قابل افسران کی کمی نہیں ہے صرف ایک شخص کے گیت گانے کی بجائے اعتماد رکھنا چاہیے کہ آنے والا آرمی چیف بھی بہت اچھا ہو گا اور جنرل راحیل شریف کی خدمات کو ہمیشہ یاد رکھا جائے گا ۔بریگیڈئیر(ر)اسلم گھمن نے کہا کہ جنرل راحیل شریف کا مدت ملازمت میں توسیع نہ لینے کا فیصلہ قابل فخر ہے کیونکہ توسیع لینے کا مطلب کسی کا حق غصب کرناہوتا ہے اس لیے کسی دوسرے سینئر افسر کو آگے آنے کا موقع ملنا چاہیے۔انجمن تاجران پاکستان کے صدر خالد پرویز ،لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے نائب صدر ناصر سعید اور قو می تاجر اتحاد پنجاب کے سینئر وائس چیئر مین جاوید اقبال بٹ نے کہا ہے کہ مدت ملازمت میں توسیع سے متعلق پاک فوج کے سربراہ جنرل راحیل شریف کا بیان قابل تعریف ہے ۔آرمی چیف کے اس فیصلہ سے ان کی مدت ملازمت میں توسیع کی افواہیں دم توڑجائیں گی ۔انھوں نے کہا کہ آرمی چیف نے آگے بڑھ کرفوج کی قیادت کی جبکہ نیشنل ایکشن پلان پربھی آرمی چیف نے قوم کواکٹھاکیا۔انھوں نے کہا کہ پاکستان میں جاری دہشت گر دی پر جس طر ح فو ج کے سپہ سالار نے قابو پایا اس کو تاریخ میں ہمیشہ یاد رکھا جائے گا ۔ انھوں نے مذید کہا کہ آرمی چیف کے مقررہ وقت پر ریٹائرمنٹ کے فیصلے سے فوج کے وقارمیں اضافہ ہوگا۔

مزید :

صفحہ اول -